تہی دست (افسانہ) صباممتاز بانو

’’زندگی اکیلے رہنے سے نہیں، کسی کے ساتھ سے حسین ہوتی ہے‘‘ یہ مشہور فقرہ اس نے پہلی دفعہ نہیں سنا تھا یہ تو کئی لوگ اسے کہہ چکے تھے کہ زندگی کا مزہ اکیلے پن میں نہیں مگر جب یہ فقرہ اس نے کہا تو اس کے تن بدن میں آگ لگ گئی۔ اس مزید پڑھیں

گھر کا قیدی (افسانہ) صبا ممتاز

رشید نے اینٹوں کو ترتیب سے لگاتے ہوئے اپنے پتھریلے ہاتھوں کو دیکھا۔کبھی کبھی تو خونی بولی بولتے تھے۔ بھٹے پر مٹی کو پتھر بناتے بناتے نرم و نازک تن سخت جاں ہوگیا تھا۔ ایک دل ہی تورہ گیا تھا۔گوشت کا یہ لوتھڑا وقت کی سختیاں سہتے سہتے اور بھی نرم ہوگیا تھا۔چھوٹی چھوٹی بات مزید پڑھیں

جستجو (افسانہ) صبا ممتاز بانو

شب نے ستاروں کی شال اوڑھ لی تھی۔مسافر کے اعصاب شل ہو چکے تھے اور وہ پوری طرح نڈھا ل ہو چکا تھا۔تھکن اس کی ہمت کو پسپا کیے دے رہی تھی لیکن سفر اس کا مقدر بن چکا تھا۔ اس کا پہلا سفر اس کی زبان سے نکلنے والے پہلے لفظ ’’اللہ جی ‘‘ مزید پڑھیں

کیا یہ بدن میرا تھا؟(افسانہ) صبا ممتاز بانو

آفتاب اپنی حدت کھو چکا تھا۔ نقرئی کرنیں اس کے وجود میں پوری طرح سما چکی تھیں۔تحت ِتاریکی بچھ چکا تھا۔نرم خود روگھاس نے پانی سے رازو نیاز شروع کردیا تھا۔پیڑوں کی دنیا آباد ہو چکی تھی۔راستے کو چْپ لگتی جارہی تھی۔اکا دکا مسافر گزرتا تو دھرتی کھنکنے لگتی۔ ایسے میں ویران پگڈنڈی پر تیز مزید پڑھیں

سبز قدم (افسانہ) صبا ممتاز بانو

خوابوں کو آنکھوں کی دہلیز کا راستہ پار نہ کرنے دیا جائے تو زندگی گزارنا مشکل ہو جاتا ہے۔ پیڑوں پر گیت گاتے پرندے خوشی کی نوید دیتے ہیں تو پتوں پر پھوٹنے والی کونپلیں تخلیق کی اہمیت کا احساس دلاتی ہیں۔ مامتا کا جذبہ بھی عورت کے اندر کونپل کی طرح پھوٹتا ہے اور مزید پڑھیں

آو پیار کریں (افسانہ ) صبا ممتاز بانو

وہ چوہدری صاحب کی رہنمائی میں ایک کھلے بازار سے گزرنے کے بعد نسبتاًایک تنگ گلی میں داخل ہو چکی تھی۔ یہ راستہ اس کے لیے اجنبی نہیں تھا۔ اس کااس راستے سے کئی بار گزرنا ہوتا تھا لیکن اسے اندازہ نہیں تھا کہ اس پلازے کے تہہ خانے میں پرانی کتابوں کا اتنا بڑا مزید پڑھیں

مزدوری (افسانہ )صبا ممتاز بانو

صبا ممتاز کا شمار عصر حاضر کے نامور ادیبوں میں ہوتا ہے ایک صحافی، کالم نگار، شاعر ہیں ان کے لیے تعارف میں اتنا کہنا کافی ہے کہ اگر افسانہ پڑھنے والے قاری نے صبا ممتاز کو نہیں پڑھا تو ان کا مطالعہ ابھی کمزور ہی نہیں یقینی طور پر نامکمل بھی ہے۔ شام نے مزید پڑھیں

خوابوں کے بند دروازے

معروف ادیب امین بھایانی کا افسانوی مجموعہ ’’ خوابوں کے بند دروازے‘‘ شائع ہوگیا۔ اس تازہ مجموعے میں دس افسانے اور چھ افسانچے شامل ہیں ۔ ’’کتاب والا پبلشر ‘‘اور ’’ فضلی سنز ‘‘کے باہمی اشتراک سے امریکہ میں مقیم معروف ادیب امین بھایانی کا تیسرا افسانوی مجموعہ ’’خوابوں کے بند دروازے‘‘ کے عنوان سے مزید پڑھیں