اُترن (افسانہ) واجدہ تبسم

’’نکو اللہ، میرے کو بہت شرم لگتی۔‘‘ ’’ایو اس میں شرم کی کیا بات ہے؟ میں نئیں اتاری کیا اپنے کپڑے؟‘‘ ’’اوں ………. چمکی شرمائی۔‘‘ ’’اب اتارتی کی بولوں انا بی کو؟‘‘ شہزادی پاشا جن کی رگ رگ میں حکم چلانے کی عادت رچی ہوئی تھی، چلا کر بولیں۔ چمکی نے کچھ ڈرتے ڈرتے، کچھ مزید پڑھیں

زکواۃ (افسانہ) واجدہ تبسم

16 مارچ 1935 تا9 دسمبر 2010 چاند آسمان پر نہیں نیچے زمین پر جگمگا رہا تھا! نواب زین یار جنگ کے برسوں پہلے کسی شادی کی محفل میں ڈھولک پر گاتی ہوئی میراثنوں کے وہ بول یاد آ گئے: کیسے پاگل یہ دنیا، کے لوگاں ماں۔ چھت پوکائے کو تو جاتے یہ لوگاں ماں۔ آنکھا مزید پڑھیں