اغوا (افسانہ) راجندر سنگھ بیدی

’’آلی ………. آلی ………. ‘‘ دلاور سنگھ نے زور سے پکارا۔ آلی ………. علی جُو، ہمارے ٹھیکے کا کشمیری مزدور تھا۔ منشی دلاور سنگھ کی آواز سن کر علی جُو ایک پل کے لیے رُکا۔ ڈوبتے ہوئے سورج کی کرنیں ابھی تک لیموں کی طرح تُرش تھیں اور علی جُو کی سُرخ رگوں سے بھری مزید پڑھیں

بکی (افسانہ) راجندر سنگھ بیدی

’’16‘‘؟ ’’جی آں ………. 16، تیسری قطار میں‘‘۔ بکی نے ایک ہاتھ سے اپنے بالوں کو دباتے ہوئے کہا۔ ’’آپ کو زحمت اُٹھانے کی نوبت ہی نہ آئے گی صاب، کنڈکٹر آپ کی مدد کرے گا۔‘‘ ’’شکریہ، شکریہ‘‘ کہتے ہوئے نوجوان مسکرایا اور مسکراتے ہوئے اُس نے ایک اور چونی کاونٹر پر رکھ دی۔ چونی مزید پڑھیں

ان کے جوتے (افسانہ راجندر سنگھ بیدی)

دن بھر کام کرنے کے بعد، جب بوڑھا رحمان گھر پہنچا تو بھوک اُسے بہت ستارہی تھی۔ جینا کی ماں، جینا کی ماں، اُس نے چِلاّتے ہوئے کہا ………… کھانا نکال دے بس جھٹ سے۔ بڑھیا اس وقت اپنے ہاتھ کپڑوں لتّوں میں گیلے کیے بیٹھی تھی اور پیشتر اس کے کہ وہ اپنے ہاتھ مزید پڑھیں