تھل مارو کا سفر (افسانہ)

مصنفہ : مسرت کلانچوی سرائیکی سے اردو ترجمہ عقیلہ منصور جدون مصنفہ کی اجازت حاصل کی گئی وسائی نے جب اپنی چوتھی اور آخری بیٹی کی خیروعافیت سے شادی کر دی تو اسے محسوس ہوا جیسے حیاتی کے سارے بوجھ اتر گئے ہوں۔ اسے اپنا وجود ہلکا پھلکا لگنے لگا۔ مہندی والی رات جب اپنے مزید پڑھیں

اس ہاتھ دے اس ہاتھ لے (افسانہ) علامہ راشد الخیری

یہ خیال کہ افتخار کلثوم عاشق زار ماں تھی ، یقیناً غلط۔ ارشاد اور فردوسی دونوں اُس کے اپنے پیٹ کے بچے تھے اور یہ واقعہ ہے کہ ارشاد پہلونٹی کا بچہ لڑکے کی ذات ، مگر جو لگن افتخار کو فردوسی کی تھی اُس سے آدھی کیا بلکہ چوتھائی بھی بچہ کی نہ تھی۔ مزید پڑھیں

پرانی شراب نئی بوتل (افسانہ) ممتاز مفتی

آج 11 ستمبر ممتاز مفتی کی ممتاز مفتی کی114 ویں سالگرہ ہے اس موقعہ ان کو خراج عقیدت پیش کرنے کے لیے ان کا یہ افسانہ پیش کیا جا رہا ہے بائی کی آواز سن کر نمی نے آنکھیں کھول دیں۔ سامنے ہاتھ میں سیٹو تھو سکوب لٹکائے اس کی سہیلی صفو کھڑی تھی۔ ہائیں مزید پڑھیں

بلاؤز (افسانہ) سعادت حسن منٹو

کچھ دنوں سے مومن بہت بے قرار تھا۔ اس کا وجود کچا پھوڑا سا بن گیا تھا۔ کام کرتے وقت، باتیں کرتے ہوئے، حتٰی کہ سوچتے ہوئے بھی اسے ایک عجیب قسم کا درد محسوس ہوتا تھا۔ ایسا درد جس کو اگر وہ بیان کرنا چاہتا تو نہ کر سکتا۔ بعض اوقات بیٹھے بیٹھے وہ مزید پڑھیں

مٹی کی مونا لیزا (افسانہ) اے حمید

آج اے حمید کا یوم پیدائش ہے اسی مناسبت سے آج ان کو خراج عقیدت پیش کرنے کے لیے ان شاہکار افسانہ قارئین کی خدمت میں پیش کیا جا رہا ہے، امید ہے قارئین اس کاوش کو پسند کریں گے۔ مونا لیزا کی مسکراہٹ میں کیا بھید ہے؟ اس کے ہونٹوں پر یہ شفق کا مزید پڑھیں

میری آخری محبت (افسانہ)عزیز اعظمی

یونیورسٹی کے گیٹ پرجیسے ہی پہلا قدم رکھا تو ہاتھ میں کتاب اٹھائے سامنے کھڑے مرزا غالب کے مجسمے سے ملاقات ہوگئی اندر گیا تو دیکھا گلستان غالب میں دورجدید کی ساری تہذیبوں کےرنگ و پھول توتھے لیکن انکے مجسمے سے چھو کر گزرنے والی ہواوں میں خوشبو اُردو کی تھی انکے قدموں کے نیچے مزید پڑھیں

محرومِ وراثت (افسانہ) علامہ راشد الخیری

محمد احسن تحصیلدار کے دونوں بچے محسن اور رضیہ تھے تو حقیقی بہن بھائی، مگر نہ معلوم احسن کس طبیعت کا باپ تھا کہ اُس کی وہی نظر محسن پر پڑتی تو محبت میں ڈُوبی اور اور رضیہ پر پڑتی تو زہر میں بُجھی۔ سمجھدار، پڑھا لکھا، مگر ظالم کی عقل پر ایسے پتھر پڑے مزید پڑھیں

حقیقی فتح(افسانہ) ڈاکٹر شاکرہ نندنی

’’خاموشی خیر کی علامت ہے جبکہ شور، شر کا مظہر ہے۔ شورپسند لوگ شورش پسند ہوتے ہیں۔ انہیں ہمیشہ فتنہ فساد کی سوجھتی ہے جبکہ خاموشی پسند کرنے والے فطرتاً امن پسند ہوتے ہیں‘‘ ڈاکٹر شاکرہ نندنی انسان خاموشی کو توڑتی ہوئی ایک چیخ کے ساتھ اس دنیا میں آتا ہے۔ نتیجتاً ساری زندگی ہنگامہ مزید پڑھیں

پرواز کے بعد (افسانہ) قرۃ العین حیدر

جیسے کہیں خواب میں جنجر آخر کیا ہو گا ‘‘۔ فکرِ جہاں کھا ی رہے۔ وہ اپنے پیر ذرا اور نہ سیراجرز یا ڈائنا ڈربن کی آواز میں ’’سان فرینڈ وویلی‘‘ کا نغمہ گایا جا رہا ہو اور پھر ایک دم سے آنکھ کھل جائے۔ یعنی وہ کچھ ایسا سا تھا جیسے مائیکل اینجلو نے مزید پڑھیں

صبح ہوتی ہے شام ہوتی ہے (افسانہ) شاکرہ نندنی

انسانوں کی اک قسم شوہروں کی بھی ہوتی ہے، یہ ہر ملک ہر جگہ پائے جاتے ہیں، کالا گورا، لمبا چھوٹا، دُبلا موٹا، گول مٹول، غرض ہر رنگ اور سائز میں یہ آپ کو مل جائے گا۔ میری بیوی اک بلا ہے سوچتا ہوں نہ جانے کیا بلا ہے اس کے ظلم کی جانے کیا مزید پڑھیں

دانی (افسانہ) کرشن چندر

دانی لمبا اور بدصورت تھا۔ اس کی ٹانگوں اور بانہوں پر بال کثرت سے تھے اور بے حد کھردرے تھے۔ صبح سویرے چارک روڈ کے ہائیڈرینٹ پر نہاتے ہوئے وہ دور سے دیکھنے والوں کو بالکل بھینس کا ایک بچہ معلوم ہوتا تھا۔ اس کے جسم میں واقعی ایک بیل کی سی طاقت تھی۔ اس مزید پڑھیں

غیبی امداد (افسانہ) شاکرہ نندنی

میلے کچیلے کالے سے گنگھریالے بالوں والے نجو نے اپنی منجھلی بہن کو بازو سے پکڑ کے جھنجھوڑتے ہوئے کہا ’’اٹھ صبح ہو گئی ھے………. کچھ ٹکر پانی کا انتظام کر نذیراں۔‘‘ یہ کہہ کر وہ بیٹھ گیا۔ ’’نہ جانے دنیا میں ہم کیا کرنے آئے ہیں .. ……نہ گھر ہے نہ گھاٹ ہے …………. مزید پڑھیں