153

لٹیروں کو ضمانت مل سکتی ہے توعبدالعلیم خان کو کیوں نہیں؟فواد چودھری

Spread the love

اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک) وفاقی وزیر اطلاعات ونشریات فواد چودھری نے کہا

ہے کہ اگر اربوں روپے کھانے والے ملزمان کو آسانی سے ضمانت مل سکتی

ہے تو علیم خان جیسے کاروباری شخص کو بھی ضمانت دی جانی چاہئے۔ ٹوئٹر

پر اپنے بیان میں انہوں نے کہا کہ علیم خان کا مقدمہ کم سنگین ہے ، اگر اربوں

روپے کھانے والے ملزمان کو اتنی آسانی سے ضمانت مل سکتی ہے تو ایک

کاروباری آدمی کو جس پر سرکاری خزانے کو نقصان پہنچانے کا کوئی الزام نہیں

ہے ضمانت دی جانی چاہئے۔ وزیر اطلاعات نے کہا کہ عام تاثر یہ ہے کہ علیم

خان کو اپوزیشن کے شور کی وجہ سے ناکردہ جرم کی سزا دی جارہی ہے۔

دوسری جانب کھیوڑہ میں دوستی سپورٹس فیسٹیول سے خطاب کرتے ہوئیفواد

چودھری نے کہا ہے کہ جمہوریت نہیں ڈاکوئوں کو خطرہ ہے،ملک لوٹنے والوں

کو منطقی انجام تک پہنچائیں گے،پاکستا ن میں احتساب کا عمل جاری رہے گا اس

سے جمہوریت یااسلام کو کوئی فرق نہیں پڑیگا،دہشت گردی کے خلاف جنگ

آخری مراحل میں ہے ،اپوزیشن سے کہتا ہوں کہ آئو مل کر فوجی عدالتوں کے

مستقبل کے حوالے سے کوئی فیصلہ کریں ،نیشنل ایکشن پلان پر اتفاق رائے سے

عملدرآمد کرنے کی ضرور ت ہے، پاکستان تحریک انصاف ملک میں نئی خارجہ

پالیسی لے کر آ رہی ہے۔ سعودی عرب ،یو اے اور ایران عمران خان کو مسلم امہ

کا لیڈر سمجھتے ہیں،کوئٹہ میں دہشت گردی کے واقعہ پر دل افسردہ ہے۔ فواد

چودھری نے کہا کہ ہم نے پاکستان میں ویزا پالیسی نرم کی ہے جس سے سیاحت

کو فروغ لے گا۔ کوئٹہ میں دہشت گردی کے واقعہ پر دل افسردہ ہے۔ انہوں نے کہا

کہ دہشت گردی صرف پاکستان نہیں بلکہ پوری دنیا کا مسئلہ ہے۔ انہوں نے کہاکہ

نیشنل ایکشن پلان پر تمام جماعتوں کو متفق ہو کر اتفاق رائے سے عملدرآمد

کرنے کی ضرورت ہے۔ وزیر اطلاعات نے کہا کہ حکومت فاٹا پر 10 برس میں

ایک ہزار ارب خرچ کرے گی جبکہ فاٹا کے حوالے سے پیپلز پارٹی سوتیلے پن

کا مظاہرہ کر رہی ہے۔ سندھ کے علاوہ باقی تمام صوبوں نے اپنے حصے میں

سے فاٹا کو پیسے دینے کی حامی بھری۔فواد چودھری نے کہا کہ پیپلز پارٹی کا

مستقبل تاریک ہے جبکہ یہ اندرون سندھ کی ایک چھوٹی سی جماعت بن کر رہ

گئی ہے۔ انہوں نے کہا کہ عمران خان پاکستان کی واحد امید کے طور پر ابھرے

ہیں۔ ہم پاکستان کو روشن مستقبل دیں گے۔



اپنا تبصرہ بھیجیں