سانحہ کوئٹہ،سوگ کی فضا،ہزارہ برادری کا دھرنا جاری

Spread the love

کوئٹہ(بیورورپورٹ)صوبہ بلوچستان کے دارالحکومت کوئٹہ کے علاقہ ہزار گنجی

میں جمعہ کے روز ہونیوالے خودکش حملے کے بعد شہر بھر کی فضا ہفتہ کے

روز بھی سوگوار رہی،شہر کے بیشتر علاقوں میں کاروبار زندگی معطل رہے ،

جبکہ واقعے کیخلاف ہزارہ برادری کا دھرنا جاری ہے،جمعۃ المبارک کے روز

کو ئٹہ کے علاقے ہزار گنجی کی سبزی منڈی میں خودکش دھماکے کے نتیجے

میں ایف سی اہلکار سمیت 20 افراد شہید اور 48 زخمی ہوئے جن میں زیا د ہ تر

تعداد ہزارہ برادری کے افراد کی تھی،ہزارہ برادری کی جانب سے خودکش

دھماکے کیخلاف مغربی بائی پاس پرجمعہ اور ہفتہ کی شب سے دیا جانیوالا دھرنا

اب بھی جاری ہے جس میں خواتین اور بچوں کی بڑی تعداد شامل ہے، مظاہرین

نے مطالبہ ہے خودکش حملے میں ملوث عناصر کو کیفر کردار تک پہنچایا جائے

اور حکومت مؤثر سکیورٹی پلان ترتیب دے، مظا ہر ین کے دھرنے اور رکاوٹوں

کے باعث مغربی بائی پاس پر ٹر یفک کی آمد و رفت معطل ہے۔ دوسری جانب

خودکش حملے میں شہید 20 میں سے 8 افراد کو مقامی قبرستان میں سپرد خاک

کردیا گیا ہے۔علاو ہ ازیں بولان میڈیکل کمپلیکس میں اب بھی 12 زخمی زیرعلاج

ہیں جن میں سے تین کی حالت تشویشناک ہے، سول ہسپتال میں 4 زخمی زیر

علاج ہیں جن میں ایک کی حالت تشویشناک بتائی گئی ہے۔سول ہسپتال لائے گئے

8 زخمیوں میں سے 4 کو طبی امداد دیے جانے کے بعد گھر بھیج دیا گیا ہے

جبکہ بولان میڈیکل کمپلیکس میں لائے گئے 38 زخمیوں میں سے 26 کو گھر

بھیج دیا گیا ہے۔دریں اثناء ہزار گنجی میں خودکش دھماکے کا مقدمہ سی ٹی ڈی

تھانے میں نامعلوم افراد کیخلاف درج کرلیا گیا ہے۔ مقدمہ ایس ایچ او شالکوٹ

خلیل بگٹی کی مدعیت میں درج کیا گیا۔پولیس نے بتایا مقدمے میں قتل، اقدام قتل،

انسداد دہشتگردی اور ایکسپلوزو ایکٹ کی دفعات شامل ہیں۔



Please follow and like us:

Leave a Reply