229

کوئٹہ میں بم دھماکے کی شدید مذمت کرتے ہیں‘شوبزشخصیات

Spread the love

لاہور (فلم رپورٹر) کوئٹہ کے نواحی علاقے ہزار گنجی میں قائم سبزی منڈی میں

بم دھماکے کی شدید الفاظ میں مذمت کی ہے ۔شوبزشخصیات کا کہنا ہے کہ

پاکستان کے دشمن جان لیں کہ اس قسم کی بزدلانہ کارروائیوں سے ہمیں ڈرایا نہیں

جا سکتا ۔دشمن جان لیں کہ ہم ایک تھے اور ایک ہی رہیں گے پاکستان کو تباہ

کرنے کی سازش کبھی کامیاب نہیں ہوگی یہ ملک تا قیامت آباد رہے گا۔بے گناہ

لوگوں کی جان لینے والے انسانیت کے دشمن ہیں ان کا کسی مزہب سے واسطہ

نہیں ہے ۔ شاہد حمید،معمر رانا،مسعود بٹ،حسن عسکری ،شانسید نور،میلوڈی

کوئین آف ایشیاء پرائڈ آف پرفارمنس شاہدہ منی،صائمہ نور،میگھا،ماہ نور،انیس

حیدر،ہانی بلوچ،یار محمد شمسی صابری،سہراب افگن ،ظفر اقبال نیویارکر،عذرا

آفتاب،حنا ملک،انعام خان ،فانی جان،عینی طاہرہ،عائشہ جاوید،میاں راشد

فرزند،سدرہ نور،نادیہ علی،شین،سائرہ نسیم،صبا ء کاظمی، ،سٹار میکر جرار

رضوی،آغا حیدر،دردانہ رحمان ،ظفر عباس کھچی ،سٹار میکر جرار رضوی

،ملک طارق،مجید ارائیں،طالب حسین،قیصر ثنا ء اﷲ خان ،مایا سونو خان،عباس

باجوہ،مختار چن،آشا چوہدری،اسد مکھڑا،وقا ص قیدو، ارشدچوہدری،چنگیز

اعوان،حسن مراد،حاجی عبد الرزاق،حسن ملک،عتیق الرحمن ،اشعر اصغر،آغا

عباس،صائمہ نور،خالد معین بٹ ،مجاہد عباس،ڈائریکٹر ڈاکٹر اجمل

ملک،کوریوگرافر راجو سمراٹ،صومیہ خان،حمیرا چنا ،اچھی خان،شبنم

چوہدری،محمد سلیم بزمی،سفیان ،انوسنٹ اشفاق،استاد رفیق حسین،فیاض علی

خاں،پروڈیوسر شوکت چنگیزی،ظفر عباس کھچی،ڈی او پی راشد عباس،پرویز

کلیم اور نجیبہ بی جی نے کہا کہ دہشت گرد ہمارے حوصلے پست نہیں کرسکتے۔

یاد رہے کہ کوئٹہ کے نواحی علاقے ہزار گنجی میں قائم سبزی منڈی میں بم

دھماکے کے نتیجے میں ایف سی اہلکاروں سمیت16افراد جاں بحق اور 30سے

زائدزخمی ہوگئے ، زخمیوں میں بعض کی حالت نازک ہے جس کے باعث

ہلاکتوں میں اضافے کاخدشہ ہے جبکہ صدمملکت ڈاکٹر عارف علوی ، وزیر

اعظم عمران خان ، وفاقی وزراء ، سیاسی رہنماؤں نے دھماکے کی شدید مذمت

کرتے ہوئے واضح کیا ہے کہ دہشتگرد کسی رعایت کے مستحق نہیں ہیں ۔

تفصیلات کے مطابق صوبہ بلوچستان کے دارالحکومت کوئٹہ کے نواحی علاقے

ہزار گنجی میں قائم سبزی منڈی میں دھماکے سے 16 افراد جاں بحق اور 30

افراد زخمی ہوگئے زخمیوں اور لاشوں کو فوری طورپر مقامی ہسپتالوں میں

منتقل کر دیا گیا ، زخمیوں میں بعض کی حالت نازک ہے جس کے باعث ہلاکتوں

میں اضافے کاخدشہ ہے ، واقعہ کے بعد ہسپتالوں میں ایمر جنسی نافذ کر دی گئی

، ہسپتال ذرائع کے مطابق شدید زخمیوں کوخون کی اشد ضرورت ہے اور شہروں

سے خون کے عطیات دینے کی اپیل کی گئی ہے ۔حکام کے مطابق زخمیوں کو

جائے وقوع سے قریب بولان میڈیکل کمپلیکس منتقل کیا گیا جہاں انہیں طبی امداد

دینے کا سلسلہ دن بھر جاری رہا ،صوبائی حکومت نے ہسپتالوں میں ایمرجنسی

نافذ کردی ہے۔ڈپٹی انسپکٹر جنرل (ڈی ائی جی) بلوچستان عبدالرزاق چیمہ نے16

افراد کے جاں بحق ہونے کی تصدیق کرتے ہوئے بتایا کہ دھماکے کے نتیجے میں

ایک ایف سی اہلکار، 8 ہزارہ برادری کے افراد اور 7 دیگر افراد جاں بحق ہوئے

، زخمیوں میں 4 ایف سی اہلکار، اور دیگر شامل ہیں۔ڈی آئی جی نے بتایا کہ

ہزارہ کمیونٹی کے افراد روزانہ یہاں سبزی لینے کیلئے قافلے کی شکل میں آتے

ہیں جن کو سیکیورٹی فراہم کرنے کیلئے پولیس اور ایف سی اہلکار بھی ہمراہ

ہوتے ہیں۔



اپنا تبصرہ بھیجیں