107

وزیر اعلیٰ سندھ نے میرٹ پر 41 ہزار اسامیاں پر کرنے کی ہدایت کردی

Spread the love

کراچی(جنرل رپورٹر) وزیر اعلیٰ سندھ نے خالی اسامیوں پر بھرتیوں کے حوالے سے منعقدہ ایک اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے کہا کہ مختلف محکموں میں گریڈ 1 تا 17 کی 41 ہزار اسامیاں خالی ہیں، میں چاہتا ہوں کہ یہ تمام اسامیاں پر کی جائیں۔

انھوں نے کہا کہ تمام بھرتیاں شفاف طریقے اور خالصتاً میرٹ کی بنیاد پر کی جائیں گی، گریڈ 1 تا 4 پر بھرتیاں مقامی سطح پر سلیکشن کمیٹیوں کے ذریعے کی جائیں گی جس میں فنانس، ایس اینڈ جی اے ڈی کے نمائندے شامل ہوں گے۔

وزیراعلیٰ سندھ نے صوبائی سیکریٹریز کو بھی ہدایت کی کہ خواتین اور معذور افراد کو ان نئی بھرتیوں میں ان کا کوٹہ دیا جائے۔اجلاس میں فیصلہ کیا گیا کہ گریڈ 5 تا گریڈ 15 پر بھرتیاں ٹیسٹنگ سروسز/ تھرڈ پارٹی کے ذریعے کی جائیں گی تاکہ میرٹ کا خیال رکھا جا سکے۔

وزیر اعلیٰ سندھ نے صوبائی وزیر تعلیم سید سردار شاہ کو ہدایت کی کہ وہ ایک علیحدہ طریقے کار کے ذریعے اساتذہ کی بھرتی کا عمل شروع کریں، اساتذہ کی یہ بھرتیاں ہر اسکول کی ضرورت کے تحت ہوں گی تاکہ اساتذہ کی کمی کے مسئلے پر قابو پایا جا سکے۔ صوبائی وزیر تعلیم نے وزیر اعلیٰ سندھ کو یقین دلایا کہ اساتذہ کی بھرتیاں گرمیوں کی چھٹیوں کے دوران مکمل کرلی جائیں گی۔

واضح رہے کہ اساتذہ کی اسامیاں موجودہ 41 ہزار اسامیوں کے علاوہ ہیں، صوبائی وزیر صحت ڈاکٹر عذرا پیچوہو نے ڈاکٹروں کی کمی کے مسئلہ پر کہا کہ 1700 ڈاکٹروں کی ریکیوزیشن سندھ پبلک سروس کمیشن کے ذریعے سلیکشن کے لیے کی گئی ہیں۔

وزیراعلی سندھ نے کہا کہ ڈاکٹروں کی تعیناتی کنٹریکٹ پر واک ان انٹریو کے ذریعے اسپیسیفک اسپتال کی بنیاد پر کی جا سکے گی، 6 ماہ کے عرصے کے بعد انھیں سندھ پبلک کمیشن کی جانب ریفر کر دیا جائے گا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں