چار دن میں قتل کیس کا فیصلہ نہیں ہو سکتا: وکیل بپھر گئے نئی جوڈیشل پالیسی کے خلاف ہڑتال

Spread the love

پشاور (سٹاف رپورٹر)نئی جوڈیشل پالیسی کے خلاف خیبر پختونخوا بار کونسل کی کال پر ہڑتال رہی، وکلا

عدالتوں میں پیش نہیں ہو رہے جس کے سبب سائلین کو شدید پریشانی کا سامنا ہے۔ قومی جوڈیشل پالیسی میں

ترامیم کے خلاف کے پی بار کونسل کی کال پر خیبرپختونخوا میں وکلا نے ہڑتال کی، صوبے بھر میں وکلا

عدالتوں میں پیش نہیں ہو رہے۔ بار کونسل کے مطابق وکلا کا موقف ہے کہ چار دن میں قتل کے مقدمہ کا

فیصلہ کرنا ناممکن ہے۔ چار دن میں واضح اور اصولوں پر مبنی انصاف کے تقاضے پورے نہیں ہو سکتے۔

وکلا نے مطالبہ کیا ہے کہ نئی جوڈیشل پالیسی میں بائیس اے کو ختم کیا جائے، وکلا کی ہڑتال کے باعث

سائلین کو شدید مشکلات کا سامنا رہا۔

Leave a Reply