بلاول ابو مرواو تحریک چلا رہا ہے: شیخ رشید

Spread the love

راولپنڈی،لاہور (نمائندہ خصوصی صباح نیوز)وفاقی وزیر ریلوے شیخ رشید نے کہا ہے بلاول کی یہ تحریک ابو بچا ئو نہیںبلکہ ابو مرواو ہے ،بلاول بھٹو زرداری کے مارچ میں دیہاڑی والے لوگ شامل ہیں، ٹرین میں 714سیٹیں دی گئیں وہ بھی پوری نہیں ۔ بلاول بھٹو زرداری پر تنقید کرتے ہوئے انکامزید کہنا تھا بلاول بھٹو اثر سے نکل آئے تو اپنی سیاست کرسکیں گے، ہم نے ٹرین کے کرائے کی مد میں 10لاکھ 44 ہزار روپے وصول کیے ہیں، ریلوے حکام نے اتنے ہی پیسے لیے جتنے بنتے تھے، زیادہ نہیں لیے، اگر ٹرین کو کوئی نقصان پہنچا تو اس کے پیسے الگ سے وصول کریں گے۔

شیخ رشید احمد نے سمجھوتہ ایکسپریس پر بھارتی عدالت کے فیصلے کیخلاف عالمی عدالت انصاف میں جانے کا عندیہ دیتے ہوئے کہا ٹرین کو سوچے سمجھے منصوبے کے تحت آگ لگائی گئی او ریہ دہشتگردی ہے ، اگر آئندہ ماہ آئی ایم ایف سے معا ہد ہ ہوتا ہے تو مہنگائی میں مزید اضافہ ہو سکتا ہے ، نواز شریف پہلے کون سے جیل میں تھے روز باہر آتے جاتے تھے ،اقتدار سے باہر آ تے ہی کوئی ایسی بیماری نہیں جو انہیں لاحق نہ ہوئی ہو ،آصف زرداری اگر کماتا ہے تو وہ لگاتا بھی ہے لیکن شریف خاندان مر جائے گا لیکن پانچ رو پے نہیں دے گا، چیف جسٹس آصف سعید کھوسہ وژن رکھنے والے جج ہیں اور وہ اپنے فیصلوں سے نئے فیصلوں کی بنیاد ڈالیں گے ، عمران خان 30مارچ کو وی آئی پی ٹرین کا افتتاح کریں گے ۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے اپنے ایک بیان اوربعدازاں ریلوے ہیڈ کوارٹر میں پریس کا نفر نس کرتے ہوئے کیا ۔

شیخ رشید نے کہا تفتان کوئٹہ ، کوئٹہ گوادر سٹینڈرڈ گیج پر جائیگا ۔ ہم وزیر اعظم اور وزیر کا سیلون بھی آفر کر نے جارہے ہیں اور میں نے اپنے سیلون کیلئے اپنی جیب سے 87ہزار روپے دئیے ہیں جو گفٹ ہیں۔ مجھے معلوم ہوا ہے بلاول نے کہا ہے سیلون اچھا نہیں ہے ہو سکتا ہے اگلی بار پھر سیلون لے لیں۔ سر سید ایکسپریس تیس جون تک چلائیں گے۔ رائل پام نے 2014سے ایک رو پیہ جمع نہیں کرایا اور اس کے ہزاروں ممبرز ہیں اسی طرح شالیمار کا کیس بھی ہے ،یہ بڑے لوگ ہیں جو ڈھکار مار کر بیٹھے ہیں۔ انہوں نے نواز شریف کی دوبارہ جیل واپسی کے حوالے سے کہا اس دن پہلا روزہ ہوگا اور رمضان میں ویسے بھی بند نہیں ہوتے ۔ بھارت نے ایک سوچے سمجھے منصوبے کے تحت انتخابی مہم کے تناظر میں کشیدگی کو ہوا دی ۔

ہماری ائیر فورس اور پاک بحریہ توچاہتی تھی انہیں اجازت دی جائے ۔ بھا ر ت کی سب میرین جو پیکٹ کھلنے کے 6ماہ بعد سمندر میں اتاری گئی وہ بھی ہمارے نشانے پر تھی ، بھارت کے نو میزائل جبکہ ہمارے اکیس میز ا ئل تیار تھے ۔ ہماری میزائل ٹیکنالوجی انڈیا سے بہت بہتر ہے اور اس کی ائیر فورس کے رنگ پسٹن بیٹھے ہوئے ہیں ہماری ائیر فورس کے پا س فورتھ جنریشن کے جہاز ہیں ۔ بنی گالا میں کوئی چیخیں نہیں نکل رہیں بلکہ وہاں تو اللہ ہو کا ورد ہو رہا ہے ۔ میں نے کہا تھابلاول بھٹو ٹرین پر آ ئیگا اور اب تو میرا سیلون بھی حاضر ہے اور جب واپس کریگا تو کم از کم بلاول کی خوشبو تو آئے گی ۔ ہم نے ریلوے میں کیٹگریز متعار ف کرائی ہیں اور جو کرایہ افورڈ کر سکتا ہے وہ اس کے مطابق ٹکٹ خریدے ۔

سر سید ایکسپریس 30جون تک چلانے کا ارادہ ہے ۔ ریلوے سٹیشنوں سے ملحقہ ریسٹ ہائوسز ہوٹل بنانے جارہے ہیں ۔ ہمارے پاس جو ویگنیں کھڑی ہیں انہیں پرائیویٹ پاٹنر شپ پر بی او ٹی کے تحت ڈیزائن کر کے سٹیشنوں کے قریب دس بستروں کا ریل ہوٹل سیلون بنانے کا ارادہ ہے ۔ ہمارے پاس چھ ایکسٹرا سیلون ہیں انہیں کراچی اور لاہور میں ہوٹل میں بدل رہے ہیں ۔ شریف خاندان جو کہتا ہے وہ کرتا نہیں ، یہ اندر سے کچھ اور باہر سے کچھ اور ہیں ۔ یہ اپنے مفاد کیلئے نو ے کے زاو یے سے لیٹ جاتے ہیں ۔ قوم اور کارکنوں کو بیوقوف بنانے کیلئے اس کے پاس بڑے جملے اور حالات ہیں جو یہ پیش کرتے ہیں ۔ میں نے تو کہا ہے لال حویلی مرشد کے ڈیرے پر آئیں ہاتھ لگانے سے پتھری نیچے آ جائے گی ۔

بڑے لوگ ہیں جو جرات سے جیل کاٹتے ہیں اور جیلو ں سے جنازے نکلتے ہیں لیکن انہوں نے حرام کا مال کمایا اور دومہینے سے سارا ٹائم ان کی بیماری نے لے لیا ۔ ساری بارگین کا ماسٹر مائنڈ شہبا زشریف ہے ۔ بلاول کیساتھ بڑی مشکل سے دوبارہ صلح ہوئی اگر کسی کو ٹرین میں ہمارے خلاف نعرے لکھ کر تسکین ہوتی ہے تو ہمیںاس سے کوئی فرق نہیں پڑتا ، ہم نے تو پینٹ کے بھی پیسے لینے ہیں ، فالودے والا ، کچیوریوں والا میں نے نکالے ، کم و بیش ایک ہزار ارب روپے اد ھر سے اْدھر گئے ہیں ۔ یہ حرام خوری کی انتہا ہے اور پھر وکٹری کا نشان بھی بناتے ہیں ۔اٹھائیس تاریخ کو نئی کوچز کے ٹینڈر کر نے جارہے ہیں ۔

ایم ایل ون انقلابی پراجیکٹ ہوگا ۔ اگر نیب آرڈیننس میں تبدیلی کی کوشش کی گئی تو میرا ووٹ اس کیخلاف ہوگا۔ ن لیگ والے کہتے ہیں ہمارے کیسز لاہور اور پیپلز پارٹی والے کہتے ہیں ہمارے کیسز کراچی میں سنے جائیں اور یہ کوئی خوش آئند بات نہیں ، میں چیف جسٹس صاحب کی عدالت میں جائوں گا ، زرداری اور شریف خاندان کا کوئی سیاسی مستقبل نہیں دیکھ رہا ۔ ہم نے پچھلے سال کی نسبت زیادہ کمائی کی ہے ۔یم ایل ون کو تین فیزز میں مکمل کیا جائے گا۔

Please follow and like us:

Leave a Reply