روس بھارت کو پاکستان کے خلاف استعمال ہونے والا اسلحہ فروخت نہ کرے

Spread the love

اسلام آباد(سٹاف رپورٹر)سیکرٹری خارجہ تہمینہ جنجوعہ نے کہا ہے پاک روس تعلقات میں بہتری آ رہی ہے پاک بھارت کشیدگی کم کرنے میں روس نے اہم کردار ادا کیا،باہمی تجا ر ت میں اضافہ اور عوام کے درمیان رابطے سے پاک روس تعلقات مزید مضبوط ہونگے ،روسی سفیر الیگزیوائی ویدوف نے کہا پاکستان روس کا اہم اتحادی ہے دونوں ممالک کے درمیان بینکنگ معاہدے کی وجہ سے تجارت میں اضافہ ہو گا۔

تاریخ میں پہلی بار پاکستان نے 23 مارچ پر روسی جنگی ہیلی کاپٹرز پریڈ میں شامل کیے۔مقررین نے کہا پاک روس تعلقات کی مضبوطی کیلئے باہمی تجارت بڑھنا انتہائی ضروری ہے۔افغان امن عمل میں روس کا کردار اہم ہے۔دونوں ممالک کو ایک ایک دوسرے کے تجربات سے فائدہ اٹھا نا چاہیے۔

بدھ کو اسٹرٹیجک ویژن انسٹیٹیوٹ کے زیر اہتمام پاکستان روس دفاعی تعلقات سے متعلق عالمی کانفرنس کا ا نعقا د کیا گیا، کانفرنس سے خطاب میں سیکرٹری خارجہ تہمینہ جنجو عہ کا مزید کہنا تھا پاکستان اور روس کے درمیان فری ٹریڈ ایگریمنٹ ،عوام کے مابین را بطے کو بڑھانے ، سکالر شپ دینے کی ضرورت ہے ،دفاعی معاہدوںکے تحت بھارت کو ایسامخصوص جنگی سامان نہ دیا جائے جو پاکستان کیخلا ف استعمال ہو سکتا ہے، سی پیک میں روس کو شامل ہونا چاہیے اور شنگھائی کارپوریشن کے تحت رابطوں کو مزید موثر بنایا جائے، رو س کے افغا نستان کیلئے نمائندہ خصوصی جلداسلام آباد آئیں گے اور پاکستانی اعلیٰ حکام بھی روس کا دورہ کریں گے،پاکستان وسطیٰ ایشیاء کیلئے گیٹ وے کا درجہ رکھتا ہے ہمیں اپنی با ہمی تجارت مزید بڑھانا ہوگی ۔

اس موقع پر روسی سفیر الیگزے وائی ویدوف نے کہا پاکستان اور روس شنگھائی تعاون تنظیم کے رکن ہیں جون میں کرغستان میں ہونیوالے اجلاس میں دونوں ممالک کے اعلیٰ حکام ملیں گے،پاکستان ہمارے لیے اہم ملک ہے افغان امن عمل کے حوالے سے دونوں ممالک میں مسلسل رابطہ ہے، 2017ء میں سندھ حکومت کیساتھ تجارت کے مختلف معاہدے کیے پاکستان بھارت ایران گیس پائپ لائن پربھی کام ہو رہا ہے پاکستان کو جنگی ہیلی کاپٹرز اور صوبہ پنجاب اور بلوچستان کو بھی ہیلی کاپٹرز فر و خت کیے ہیں ،معاہدہ 2018ء کے تحت دونوں ممالک کے بینکوں کے ذریعے رقم منتقل کی جا سکتی ہے۔
معاہدہ نہ ہونے کی وجہ سے کاروبار ی سرگرمیوں میں بہت زیادہ رکاوٹ تھی جو اب ختم ہو گئی ہے ،روس تجارتی حجم بڑھانے ،توانائی،ریلوے انفارمیشن ٹیکنالوجی،سٹیل مل، ا د و یا ت سمیت مختلف شعبوں میں سرمایہ کاری کابھی خواہشمند ہے۔کانفرنس سے صدر اسٹریٹجک ویژن انسٹیٹیوٹ ڈاکٹر ظفر اقبال چیمہ ،روس کی اکیڈمی آف سائنس ماسکو کی ڈاکٹر آرین نیلو لیوینہ سیرینکو، سابق سفارتکار عارف کمال،سینٹر فار پولیٹیکل سٹڈیز آف رشیا ڈاکٹر یولیا ا و ر سا بق رابطہ کار نیکٹا حامد علی خان نے بھی خطاب کیا۔
پاک روس

Please follow and like us:

Leave a Reply