28 مارچ کے واقعات ایک نظر میں

Spread the love

واقعات

1738 برطانیہ نے اسپین کے خلاف جنگ کا اعلان کیا۔

1845 میکسیکو نے امریکا سے سفارتی تعلقات منقطع کیے۔

1854 کریمین جنگ:فرانس نے روس کے خلاف جنگ کااعلان کیا۔

1868 ریڈیو کے موجد مارکونی نے پہلی بار انگلینڈ سے ایک ٹیلی گراف یورپ بھیجا۔

1959 کو تبت میں دلائی لامہ کی حکومت کو چین نے بر طرف کرکے اپنے حمایت یافتہ پنچن لامہ کو سربراہ کا مقرر کیا۔

1970 ترکی میں سات اعشاریہ چار کی شدت کا زلزلہ آیا جس کے نتیجے میں ایک ہزار چھیاسی افراد ہلاک جبکہ دوسوچوون دیہات تباہ ہوئے۔

1970ء پاکستان کے صدر یحیی خان نے لیگل فریم ورک آرڈر جاری کیا جس کو آئینی عمل کے لیے ایک لائحۂ عمل کے طور پر استعمال کیا جانا تھا۔ اس کے تحت قومی اسمبلی کی 313 نشستوں میں سے 169 نشستیں مشرقی پاکستان کو دی گئیں۔

1973 کو ویت نام میں متعین آخری فوجی اپنے وطن روانہ ہوا جس سے ویت نام میں 10 ویت امریکا جنگ اپنے اختتام کو پہنچی۔

2005 سماٹرا میں انیس سو پینسٹھ کے بعد دوسرا بڑا زلزلہ آیا، جس کی شدت ریکٹر اسکیل پرآٹھ اعشاریہ سات تھی۔ زلزلے کے نتیجے میں ایک ہزار تین سوافراد لقمہ جل بنے۔

ولادت

1868ء میکسم گورکی روسی انقلابی مصنف

میکسم گورکی کے بارے میں مزید معلومات کے لیے یہاں کلک کریں

1892ء کارنیلی ہیمینس ایک بیلجئیمی ماہر فعلیات تھے جنھوں نے 1938 کا نوبل انعام برائے طب و فعلیات حاصل کیا۔ انھوں نے خون کے دباؤ اور خون میں موجود آکسیجن کے متعلق کام کیا۔ ان کا انتقال 18 جولائی 1968 کو ہوا۔

1930ء جیروم آئیزک فرائڈ مین امریکہ کے نامور طبیعیات دان۔ انہوں نے سنہ 1990 میں اپنے ہم وطن سائنس دان ہنری وے کینڈل اور ایک کینڈا کے سائنس دان رچرڈ ای ٹیلر کے ہمراہ نوبل انعام برائے طبیعیات جیتا ان کو یہ انعام ایٹمی فزکس میں کام کے عوض دیا گیا۔

1934ء ایم اکرم وہ سب سے بہترین پنجابی فلم ڈائریکٹر تھے، جنہوں نے کبھی بھی معیارسمجھوتہ نہیں کیا۔ ایم اکرم اصل میں ایک فلم ایڈیٹر تھا ان کی پہلی فلم الزام (1953) میں ریلیز ہوئی۔ ان کا انتقال 3 اپریل 2016 کو ہوا۔ ان کی شہرہ آفاق فلموں میں گھر جوائی (1958ء)
بانکی نار (1966ء)، چڑھدا سورج (1970ء)، اُوچا ناں پیار دا (1971ء)، سلطان (1972ء) گولڈن جوبلی فلم، خان چاچا (1972ء) ایک ڈائمنڈ جوبلی فلم، سیدھا رستہ (1974ء)، عشق میرا ناں (1974ء) ایک پلاٹینم جوبلی فلم، ہتھیار (1979ء)، خوددار (1985ء فلم) گولڈن جوبلی فلم، سانجھی ہتھکڑی (1986ء)

1959ء پاکستان کے معروف سیاست دان اور ماہر معاشیات ہیں۔ نواز شریف کے دوسرے دور حکومت میں انھوں نے پروگرام 2010 کا اعلان کیا۔ اگر اس پر عمل کیا جاتا تو پاکستان ایشیا کا ایک مضبوط ترین ملک ہوتا۔ وہ اس پروگرام کے کوآرڈینیٹر اور منصوبہ بندی کمیشن کے ڈپٹی چیئرمین تھے۔ وہ 12 اکتوبر 1999 تک اپنے عہدے پر فائز رہے۔ ان کا تعلق مسلم لیگ ن سے ہے۔ 2013 کے الیکشن میں بنے والی ن لیگ کی حکومت میں وزیر داخلہ بھی رہے۔ اسی حکومت میں ان پر نارووال ان کے آبائی حلقے میں ان پر کسی نے گولی چلا دی اور ان کا علاج لاہور کے سروسز ہسپتال میں ہوا۔ پانچ مرتبہ رکن قومی اسمبلی منتخب ہوئے اور تین مرتبہ وزیر اور دو مرتبہ منصوبہ بندی کمیشن کے چیئرمین بنے۔

1962ء مولانا اعظم طارق، سیاسی و مذہبی تنظیم سپاہ صحابہ کے راہنما

1964ء نصیرسومرو، ہنگورجا، ضلع خیرپور سندھ، پاکستان میں پیدا ہونے والے انجینئر، صحافی، شاعر، نثر نگار، نقاد اور کالم نگار ہیں۔

1986ء مصطفیٰ علی، پاکستانی نژاد امریکی پیشہ ورانہ پہلوان ہے۔ ان کا اصل نام عدیل عالم انہوں نے حال ہی میں ڈبلیو ڈبلیو ای کے ساتھ ایک معاہدے پر دستخط کیے ہیں۔ انہوں نے اس وقت wwe کے لیے معاہدہ پر دستخط کیے، جہاں انہوں نے مصطفی علی کے نام سے اپنا تعارف کروایا ہے۔
wwe میں پاکستان کی نمائندگی کرنے والے وہ پہلے پاکستانی ہیں۔ ان کے والد کراچی پاکستان سے تعلق رکھتے ہیں اور والدہ نئی دلی ہندوستان سے تعلق رکھتی ہیں ان کا کہنا ہے کہ وہ آدھے پاکستانی اور آدھے بھارتی نژاد ہیں۔

27 مارچ کے واقعات پڑھنے کے لیے یہاں کلک کریں

وفات

657 ء خیر التابعین، عاشق رسول، تاجدار اقلیم محبت خواجہ اویس قرنی۔ پورا نام اویس بن عامر قرنیؒ وطن یمن قبیلہ مراد۔ حضور سے غائبانہ عشق رکھتے تھے۔

1534ء ماہم بیگم مغلیہ سلطنت کے بانی ظہیر الدین بابر کی بیوی اور مغل شہنشاہ نصیرالدین ہمایوں کی والدہ تھی۔

1982 ولیم جیوک ایک امریکی کیمیاء دان تھے جنھیں مادے کی خصوصیات کو درجہ حرارت ابسولیوٹ زیرو پر کیے گئے مطالعے کے لیے جانا جاتا ہے۔ انھیں اس کام کے عوض 1949ء میں نوبیل انعام دیا گیا۔ وہ 12 مئی 1895ء کو پیدا ہوئے۔

1941 برطانوی خاتون ناول نگارورجینیا وولف نے خودکشی کر لی۔

1969ء امریکی جنرل اور مدبر امریکا کے 34 ویں صدر۔ ڈینی سن (ٹیکساس) میں پیدا ہوئے۔ 1915ء میں فوج میں بھرتی ہوئے۔ دوسری جنگ عظیم شروع ہونے پر امریکی چیف آف سٹاف، جنرل مارشل کے آفس میں بریگیڈیر جنرل کی حیثیت سے جنگی منصوبہ بندی کے سربراہ مقرر ہوئے۔ جون 1942ء میں یورپ میں امریکی افواج کے کمانڈر بنا دیے گئے۔ نومبر1942ء میں شمالی افریقہ پر اتحادی فوجوں کے حملے کی قیادت کی۔ جنوری 1943ء میں مغربی یورپ میں مصروف پیکار اتحادی افواج کے سپریم کمانڈر بنائے گئے۔1944ء میں جنرل کے عہدے پر فائز ہوئے۔ 6جون 1946ء کو فرانس پر حملہ کیا اور پھر مغربی یورپ اور جرمنی پرحملوں کی کمان کی۔ 1945تا1948 امریکی افواج کے چیف آف سٹاف رہے۔ بعد ازاں ریٹائر ہو کر کولمبیا یونیورسٹی کے صدر بنے۔ 1951ء میں نیٹو کی افواج کے کمانڈر بنائے گئے۔ 1952میں ری پبلکن پارٹی کے امیدوار کی حیثیت سے صدارتی انتخاب میں حصہ لیا اور ڈیموکریٹک پارٹی کے امیدوار ایڈلائی سٹیونسن کو شکست دی۔1956 میں دوبارہ انتخاب لڑا اور کامیاب رہے۔ ان کی پہلی مدت صدارت کا اہم واقعہ کوریا میں گفت و شنید کے ذریعے، جنگ بندی ہے۔ 1960 میں ایک بلند پرواز امریکی جاسوس طیارہ روس نے مار گرایا اور اس کے پائلٹ فرانسس گیری پاورز کو پکڑ لیا۔ اس اور چند دیگر واقعات سے آئزن ہاور کی ساکھ کو سخت دھکا لگا۔ اور وہ 1961ء میں عملی سیاست سے ریٹائر ہو گئے۔ ویت نام میں ایٹمی اسلحہ استعمال کرنے کے زبردست حامی تھے۔

2002ء جنرل ٹکا، اکستان کی بری فوج کے ساتویں سربراہ اور پہلے چیف آف اسٹاف جنرل ٹکا خان۔

جنرل ٹکا کے بارے وہ حقیقت جانیئے جس کے بعد تاریخ ایک نیا موڑ لے گی۔

Please follow and like us:

Leave a Reply