صوبائی وزراء کی کارکردگی زیر غور، ضروری ہوا تو رد و بدل کرینگے،عثمان بزدار

Spread the love

لاہور(سٹاف رپورٹر) وزیراعلیٰ پنجاب سردار عثمان بزدار نے کہا ہے کہ ہندو

لڑکیوں کے اغواء کے معاملے میں سندھ پولیس سے رابطے میں ہیں، بچیوں نے

ہائی کورٹ میں بھی اپیل دائر کی ہے، نواز شریف کو علاج معالجے کیلئے ہر

طرح کی سہولت فراہم کی گئی جبکہ ان کی میڈیکل رپورٹس میڈیاکے سامنے ہے۔

ان خیالات کا اظہار انہوں نے پنجاب انسٹی ٹیوٹ آف مینٹل ہیلتھ میں منشیات کے

عادی افراد کی بحالی کیلئے 100 بیڈز پر مشتمل علاج گاہ کا افتتاح کرنے کے

بعدمیڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔وزیراعلیٰ پنجاب نے کہا کہ صوبائی وزراء

کی کارکردگی کا باقاعدگی سے جائزہ لیا جا رہا ہے اوراگر ضروری ہوا تو کابینہ

میں رد و بدل کیا جاسکتا ہے جبکہ فیاض الحسن چوہان ہمارے بھائی ہیں۔ انہوں

نے کہا کہ پنجاب میں بڑے چیلنجز درپیش ہیں لیکن ہمارا عزم بھی بلند ہے۔ انہوں

نے کہا کہ گندم خریداری مہم کیلئے جامع حکمت عملی تیار کی ہے اورصوبائی

وزراء بھی گندم خریداری مہم کیلئے میدان میں نکلیں گے۔ قبل ازیں وزیراعلیٰ نے

انسٹی ٹیوٹ کے احاطے میں پودا لگا یا اور شجرکاری مہم کی کامیابی کیلئے دعا

بھی کی۔ وزیراعلیٰ نے علاج گاہ کے مختلف شعبوں کا دورہ کیا۔ وارڈز میں گئے،

علاج کیلئے داخل منشیات کے عادی افراد سے ملاقات کی اور ان کی خیریت

دریافت کی اور علاج معالجے کی سہولتوںکے بارے میں بھی ا ستفسار کیا۔ اس

موقع پر وزیراعلیٰ عثمان بزدار کو ایک مریض نے اپنے ہاتھ سے تیار کی جانے

والی پینٹنگ پیش کی۔ اس موقع پر وزیراعلیٰ نے کہا کہ معاشرے میں منشیات کے

عادی افراد کی موجودگی کسی المیے سے کم نہیں لہٰذامنشیات کی عادت کا شکار

لوگ نفرت سے زیادہ ہمدردی کے مستحق ہیں ۔سٹیٹ آف دی آرٹ ادارے میں نہ

صرف ان لوگوں کا علاج کریں گے بلکہ انہیں زندگی کی خوشیاں لوٹائیں گے۔

انہوں نے مزید کہا کہ صوبے میں منشیات کے خاتمے کیلئے ٹاسک فورس بنا دی

ہے جس میں صوبائی وزیر صحت اور ایکسائز اینڈ نارکوٹکس کنٹرول بھی شامل

ہوں گے۔بعدازاںوزیراعلیٰ پنجاب عثمان بزدار اچانک چلڈرن ہسپتا ل پہنچ

گئے،جہاںمختلف وارڈزکا دورہ کیا اورزیر علاج بچوں کی دلجوئی کی۔وزیراعلیٰ

نے مریض بچوں کے والدین اورلواحقین سے علاج معالجے کی دستیاب سہولتوں

کے بارے میں دریافت کیا ۔وزیراعلیٰ عثمان بزدار نے چلڈرن ہسپتال کے کارڈیک

آئی سی یو کا بھی معائنہ کیا ۔وزیراعلیٰ نے ایک خاتون کی درخواست پر ان کے

بچے کا بون میرو ٹرانسپلانٹ جلد کرانے کی ہدایت کی ۔اس موقع پرگفتگو کرتے

ہوئے وزیراعلیٰ نے کہا کہ پنجاب کے دوردراز علاقوں میں ضرورت کے تحت

حکومت پانچ مدراینڈ چائلڈ ہسپتال قائم کریگی۔ وزیراعلیٰ نے کہا کہ چلڈرن ہسپتال

میں مفت ادویات کی فراہمی کیلئے اضافی فنڈز فراہم کردئیے گئے ہیں جبکہ دیگر

ضروری وسائل بھی ترجیحی بنیادوں پر فراہم کیے جائیں گے۔ دریں اثناء

وزیراعلیٰ پنجاب عثمان بزدارنے سول سیکرٹریٹ میں مختلف دفاتر کا اچانک

دورہ کیا اورمحکمہ ہائر ایجوکیشن میں ایڈیشنل سیکرٹری ،ڈپٹی سیکرٹریز

اورسیکشن آفیسرز کے دفاتر کا معائنہ کیا۔انہوںنے محکمہ ہائرایجوکیشن میںموجود

لوگوں اورخواتین سے گفتگو کی اوردرپیش مسائل کے بارے میںدریافت کیا۔ایک

خاتون ٹیچر کی طرف سے سیکرٹریٹ میں ہائر ایجوکیشن کے عملے کی طرف

سے باربار چکر لگوانے کی شکایت پر وزیراعلیٰ نے فوری ایکشن کا حکم دیا

اورہدایت کی کہ لیڈی ٹیچر کا مسئلہ قواعد و ضوابط کے مطابق فوری حل کیا

جائے ۔اس موقع پر وزیراعلیٰ نے کہا کہ سیکرٹریٹ آنے والے اساتذہ اکرام کو

عزت و احترام دیا جائے ۔علاوہ ازیںوزیراعلیٰ پنجاب عثمان بزدار سے سول

سیکرٹریٹ میں جموں و کشمیر کونسل برائے انسانی حقوق برطانیہ کے صدر

ڈاکٹر سید نذیر گیلانی کی قیادت میں وفد نے ملاقات کی،جس میں مقبوضہ کشمیر

میں نہتے کشمیر ی عوا م پر بھارتی ظلم وستم کی مذمت کی گئی اورمقبوضہ

کشمیر میں بھارتی ظلم وتشددکے واقعات کویورپ کے اندرموثرانداز میں اجاگر

کرنے کی ضرورت پر زور دیا گیا۔ وزیر اعلی عثمان بزدار نے اس موقع پر

گفتگو کرتے ہوئے ملکی معیشت کی بہتری کیلئے بیرون ملک مقیم پاکستانیوں کی

خدمات او رکردار کی تعریف کرتے ہوئے کہاکہ بیرون ملک بسنے والے پاکستانی

وطن کی خدمت کے جذبے سے سرشار ہیں اوربیرون ملک بسنے والے پاکستانی

ہمارا قیمتی اثاثہ ہیں۔انہوں نے کہا کہ اوورسیز پاکستانیو ں کو ہر طرح کی

سہولتیں دیں گے جبکہ حکومت پنجاب بیرون ملک مقیم پاکستانیوں کے حقوق اور

املاک کا تحفظ یقینی بنائے گی۔وزیراعلیٰ سے ملاقات کرنیوالوں میں یورپی یونین

پاک فرینڈشپ فیڈریشن یورپ کے چیئرمین پرویز اقبال چوہدری، یورپی یونین پاک

فرینڈشپ فیڈریشن اٹلی کے صدر تجمل حسین کھٹانہ، یورپی یونین پاک فرینڈشپ

فیڈریشن بیلجیم کے ممبرزڈاکٹر طاہر فاروق ، اعظم اختر،واجد خان اور اسلم

کھٹانہ شامل تھے ۔

Please follow and like us:

Leave a Reply