ڈہرکی، ہندو لڑکیوں کے مبینہ اغوا کا معاملہ ، 4 افراد گرفتار

Spread the love

نکاح خواں قاری بشیر کے والد، بھائی، گواہ کو گرفتار کر کے گھوٹکی منتقل کر دیا گیا

ڈہرکی (نمائندہ صرف اردو ڈات کام) ڈہرکی سے ہندو لڑکیوں کے مبینہ اغوا پر وزیراعظم کے نوٹس کے بعد

سندھ اور پنجاب پولیس نے چھاپے مار کر نکاح خواں کے والد اور گواہ سمیت 4 افراد کو گرفتار کر لیا۔

تفصیلات کے مطابق سندھ کے علاقے ڈہرکی سے دو ہندو لڑکیوں کے مبینہ اغوا پر وزیراعظم نے نوٹس لیا

جس کے بعد پنجاب اور سندھ پولیس نے خان پور میں کارروائیاں کیں۔ نکاح خواں قاری بشیر کے والد، بھائی،

گواہ سمیت 4 افراد کو گرفتار کر کے گھوٹکی منتقل کر دیا گیا۔ گواہ جواد حسن گل کے خلاف تھانہ سٹی خان

پور میں موبائل چوری کے الزام میں بھی مقدمہ درج کرلیا گیا۔ وزیراعلی سندھ کی ہدایت پر وزیر ٹرانسپورٹ

سندھ اویس شاہ نے لڑکیوں کے گھر اہلخانہ سے ملاقات کی اور دونوں لڑکیوں کو جلد بازیاب کرانے کی یقین

دہانی کرائی۔

Leave a Reply