پاکستان دہشتگردی کو جڑ سے اکھاڑ پھینکنے میں کامیاب،کرپٹ لوگوں کو سزادینے کیلئے قوانین بنانے چاہئیں،ڈاکٹر مہاتیر

Spread the love

اسلام آباد(سٹاف رپورٹر )ملائیشیا کے وزیراعظم ڈاکٹر مہاتیر محمد نے کہا ہے

کہ میں نے ہمیشہ عمران خان کیلئے نیک تمنائوں کا اظہار کیا ہے ،ایک

وزیراعظم کا کام لوگوں کی خدمت کرنا ہے، اس کیلئے آپ کو نظریات اور

دوسرے کامیاب ممالک کی تقلید کرنی چاہیے، غیر ملکی سرمایہ کاری کیلئے

پاکستان کا پر امن اور مستحکم ہونا ضروری ہے ، پاکستان دہشت گردی کو نہ

صرف کم کرنے بلکہ اسے جڑ سے اکھاڑ پھینکنے میں کامیاب ہو گیا ،اب پاکستان

کا استحکام ضروری ہے، کرپشن کو ہم اخلاقی اقدار پر عمل درآمد کر کے ختم کر

سکتے ہیں ، کرپشن میں ملوث لوگوں کو سزائیں دینے کیلئے قوانین بنانے چاہئیں

، قیادت کرپٹ نہیں ہونی چاہیے ،اگر قیادت کرپٹ ہوگی تو کرپشن کا خاتمہ

ناممکن ہے ، ہمیں ماننا ہوگا کہ ہم نے بہت ساری غلطیاں کی ہیں ، اسلام ہمیں

دوسروں سے لڑنے اور قتل وغارت کی اجازت نہیں دیتا ، ہم چیزوں کو اپنے ہاتھ

میں لیں نہ کہ اداروں سے قرض لیتے رہیں ، ہم نے ملائیشیا میں اس سے بچنے

کیلئے کرنسی کا ریٹ متعین کیا ، پاکستان اور ملائشیا کے عوام کے مابین روابط

کو مزید بڑھانا نہایت ضروری ہے اس سے دونوں ممالک کے مابین دوستی بڑھے

گی ۔ ملائشیا کے وزیراعظم ڈاکٹر مہاتیر محمد نے سرکاری ٹی وی کو انٹرویو

دیتے ہوئے کہا کہ پاکستان آکر اور وزیراعظم عمران خان سے مل کر مجھے بہت

خوشی ہوئی ،عمران خان کے بارے میں میں نے اس وقت سے پڑھ رکھا تھا جب

وہ کرکٹر تھے ، بعد ازاں وہ پاکستان آئے اور سیاست شروع کی ، میں نے ہمیشہ

عمران خان کیلئے نیک تمنائوں کا اظہار کیا ہے ،ہماری اس وقت سے قریبی

دوستی تھی جب وہ وزیراعظم کے منصب پر فائز نہیں ہوئے تھے ، عمران خان

ملائیشیا میں بہت مشہور ہیں اور بطور کرکٹر ان کے بہت سے چاہنے والے ہیں ۔

انہوں نے کہا کہ ہم چاہتے تھے کہ عمران خان کو قوم کی رہنمائی کا موقع ملنا

چاہیے ۔انہوں نے کہا کہ کوئی فرد جب وزارت عظمیٰ کے منصب پر فائز ہو

جائے تو اسے اپنے پیچھے ایک مثال چھوڑنی چاہیئے اور جب وہ چلا جائے تب

بھی اس کے نقوش باقی رہیں ، جب آپ وزیراعظم بن جاتے ہیں تو قدرت آپ کو

ملک کیلئے بہت کچھ کرنے کا موقع فراہم کرتی ہے ، ایک وزیراعظم کا کام

لوگوں کی خدمت کرنا ہے اس کیلئے آپ کو نظریات اور دوسرے کامیاب ممالک

کی تقلید کرنی چاہیے

Please follow and like us:

Leave a Reply