بلوچستان نے سندھ میں امانتاً رکھوائے گئے قیمتی نوادرات 40 سال بعد واپس لے لیے

Spread the love

کوئٹہ (مانیٹر نگ ڈیسک)حکومت بلوچستان چالیس برس قبل سندھ منتقل کئے گئے

قدیم قیمتی نوادرات کو واپس لینے کامیاب ہوگئی۔بلوچستان اپنے دامن میں دنیا کا

قدیم ترین تہذیبی ورثہ اور ثقافت سموئے ہوئے ہے مگر بدقسمتی سیگزشتہ

حکومتوں کی جانب سے ثقافتی ورثے اور قدیم نوادرات کو محفوظ رکھنے کے

لیے عملی اقدامات نہیں کیے گئے۔بلوچستان میں 1960 سے 1970 کی دھائی

میں نوادرات کی تلاش میں فرانسیسی، جرمنی، اطالوی اور امریکی مشن بلوچستان

آئے جنہوں نے میری قلات، نال اور کوئٹہ کے علاقے کلی گل محمد سے بڑی

تعداد میں نوادرات دریافت کیے۔ان ہی میں فرانس سے تعلق رکھنے والے ڈاکٹر

جین فرینسکو جیرج بھی تھے جنہوں نے 1974 میں ضلع بولان کے علاقے

مہرگڑھ کو دریافت کیا۔ان نوادرات میں 2 سے 6 ہزار سال قبل کے قدیم

خوبصورت برتن، پتھر کے اوزار اور مورتیاں شامل ہیں۔

Please follow and like us:

Leave a Reply