123

مزید کشیدگی نہیں چاہتے۔ سشما سوراج

Spread the love

دونوں ممالک کی سرحدوں کے درمیان کشیدگی سے پورے خطے میں منفی اثرات مرتب ہوں گے

پاکستانی کی حدود میں 50 کلومیٹر اند جاکر بم گرائے ،ہم نے دہشتگردوں کے ٹھکانوں کو نشانہ بنایا تھا

بھارتی وزیر خارجہ کوچین میں آر آئی سی کے وزرائے خارجہ کے اجلاس میں بھارتی جارحیت پر تنقید کا سامنا کرنا پڑا

بیجنگ(مانیٹرنگ ڈیسک، صباح نیوز، وائس آف ایشیا) بھارتی وزیر خارجہ سشما سوراج نے کہا ہے کہ بھارت

تحمل اور ذمہ داری کا مظاہرہ کرتے ہوئے مزید کشیدگی نہیں چاہتا، کیونکہ جنگ سے کسی کو فائدہ نہیں ہوگا،

دونوں ممالک کی سرحدوں کے درمیان کشیدگی سے پورے خطے میں منفی اثرات مرتب ہوں گے۔بھارتی وزیر

خارجہ سشما سوراج نے کشیدگی کے خاتمے کی خواہش کا اظہار چین میں آر آئی سی(روس، انڈیا،چین)کے

وزرائے خارجہ کے اہم اجلاس میں شرکت کے دوران دیا۔ اس اجلاس میں سشما سوراج کو بھارتی جارحیت پر

تنقید کا سامنا کرنا پڑا۔ سشما سوراج نے کہا کہ ہم نے پاکستانی کی حدود میں 50کلومیٹر اند جاکر بم گرائے۔

انہوں نے دعویٰ کیا کہ ہم نے دہشت گردوں کے ٹھکانوں کو نشانہ بنایا تھا۔سشما سوراج نے یہ دعوی بھی کیا

بھارت نے کالعدم تنظیم جیش محمد کے کیمپ کو نشانہ بنایا۔انہوں نے کہا کہ دونوں ممالک کی سرحدوں کے

درمیان کشیدگی سے پورے خطے میں منفی اثرات مرتب ہوں گے۔واضح رہے کہ گذشتہ روز بھارتی فضائیہ

کے طیاروں نے پاکستان کی فضائی حدود کی خلاف ورزی کی تھی تاہم پاک فضائیہ کے شاہینوں نے بزدل

بھارتیوں کو بھاگنے پر مجبور کردیا تھا اور آج پاکستان نے دو بھارتی طیاروں کو مار گرایا ۔

اس بات کی پوری امید ہے کہ جیسے ہی سشما سوراج ملک واپس پہنچے گی تو ان کا بیان بدل جائے گا ایسا

محسوس ہوتا ہے کہ انہوں نے یہ بات چین میں ہونے کی وجہ سے ہی دیا ہے تاکہ اقوام عالم میں اور خاص

طور پر چین میں اپنا تشخص بحال کیا جا سکے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں