191

27 فروری کے واقعات ایک نظر میں

Spread the love

واقعات

1557ء – لندن میں پہلا روسی سفارتخانہ کھولا گیا،روس اور امریکا میں تجارتی معاہدہ طے پایا


1594ء – ہنری چہارم نے فرانس کے شہنشاہ کا تاج پہنا

1997ء – آئرلینڈ میں طلاق کو قانونی حیثیت حاصل ہوئی

2019ء جنگی جنون میں مبتلا بھارتی مودی سرکار نے 26 فروری کو پاکستان کی فضائی حدود کی خلاف ورزی کی اور دعویٰ کیا کہ پاکستان میں دہشت گردوں کے ٹھکانوں کے حملہ کرکے 350 دہشت ہلاک کر دیئے جس کا انڈین میڈیا میں خوب تذکرہ کیا گیا جس پر پاکستانی حکومت نے جوابی کارروائی کا عندیہ دیا اس پر 27 فروری کو انڈین جنگی طیاروں نے دوبارہ فضائی حدود کی خلاف ورزی کی جس کے نتیجے میں 2 مگ طیارے مار گرائے ان میں ایک پاکستان اور دوسرا انڈین حدود میں گرا اور ایک پائیلٹ کو زندہ گرفتار کیا گیا اور پائیلٹ کو ویانا کنونشن کے مطابق حاصل تمام سہولیات دی گئیں۔ پائیلٹ کا نام ابھے نندن تھا جو ایک ریٹائرڈ ائیر مارشل کا بیٹا تھا۔

ولادت

272ء – قسطنطین اعظم، رومی شہنشاہ

1902ء – جانسٹین بک، امریکی صحافی اور مصنف

1926ء – ڈیوڈ ایچ ہیوبل، کینیڈین نژاد امریکی سائنس دان

1932ء – الزبتھ ٹیلر، انگریز امریکی اداکارہ اور پروڈیوسر

1942ء – رابرٹ ایچ. گربس، امریکی کیمسٹ

وفات

1517ء سنی عالم، مفسر، محدث، فقیہ، محدث، مؤرخ، سیرت نگار تھے۔ آپ عموماً شارح صحیح بخاری کے نام سے مشہور ہیں۔علامہ قسطلانی کی پیدائش 12 ذیقعد 851ھ مطابق 20 جنوری 1447ء کو قاہرہ میں ہوئی۔

1712ء بہادر شاہ اول، مغلیہ سلطنت کا ساتواں شہنشاہ تھا جس نے ہندوستان پر 1707ء سے 1712ء تک حکومت کی۔ اس کا اصل نام قطب الدین محمد معظم تھا، جبکہ اس کے والد اورنگزیب عالمگیر نے اسے شاہ عالم کا خطاب دیا تھا۔ وہ 14 اکتوبر 1643 کو پیدا ہوئے۔

1936ء – ایوا پیولو، روسی معالج، ایوا پیولو ایک روسی سائنس دان تھے جنھیں ان کے کام کلاسیکل کنڈیشنگ کے حوالے سے جانا جاتا ہے جس سے جانوروں کے برتاؤ کے حوالے سے نئی باتیں معلوم ہو سکیں۔ انھوں نے 1904ء کو نوبل انعام برائے طب بھی وصول کیا۔

1989ء – کونارڈ لونٹز، آسٹرین ماہر حیوانات

1992ء پروفیسر خواجہ محمد شفیع دہلوی، پاکستان سے تعلق رکھنے والے اردو کے نامور ادیب اور تحریک پاکستان کے کارکن تھے۔واجہ محمد شفیع 1906ء میں دہلی میں پیدا ہوئے تھے۔ ان کی تصانیف میں دلی آوازیں، آتش خاموش، گناہ، عشق جہانگیری، محفل، شرح دیوان میر، گاما پہلون، زیب، ابلیس اور مغلوں کا مد و جزرکے نام سر فہرست ہیں۔ خواجہ محمد شفیع کو ان کی ادبی خدمات کے اعتراف کے طور پر ادیب الملک کا خطاب ملا تھا۔

1998ء – جارج ایچ ہائیچنگ، امریکی دوا ساز

2011ء – نجم الدین اربکان، ترکی انجینئر اور سیاست دان، اتحاد بین المسلمین کے داعی اور سابق ترک وزیر اعظم نجم الدین اربکان 29 اکتوبر1926 کو شمالی ترکی کے سینوپ نامی علاقے میں پیدا ہوئے جو بحرہ اسود کے ساحل پر واقع ہے۔ آپ کے والد کا نام محمت صابری تھا۔

تعطیلات و تہوار

1967ء ڈومینیکا نے برطانیہ سے آزادی حاصل کی

1945ء لبنان نے آزادی کا اعلان کیا

اپنا تبصرہ بھیجیں