134

بھارت کا ایک اور جھوٹ سامنے آگیا، شبیر شاہ کی سیکیورٹی کا سوال ہی نہیں وہ عرصہ دراز سے قید میں ہیں۔ اہلیہ ڈاکٹر بلقیس

Spread the love

ساری عمر جیل میں رہے لہذا ایسے میں ان کو سیکورٹی فراہم کرنے کا سوال ہی پیدا نہیں ہوتا
یہ بات سمجھ سے بالاتر ہے کہ ریاستی حکومت کس سیکورٹی کو واپس لینے کی بات کررہی ہے
ڈیموکریٹک فریڈم مومنٹ کے محبوس چیرمین شبیر احمد شاہ کی اہلیہ ڈاکٹر بلقیس کا ردعمل

سری نگر(کے پی آئی)ڈیموکریٹک فریڈم مومنٹ کے محبوس چیرمین شبیر احمد شاہ کی اہلیہ ڈاکٹر بلقیس نے

کہا ہے کہ شبیر احمد شاہ نئی دہلی کے تہاڑ جیل میں قید ہیں، بھارت کے خلاف جدوجہد کی پاداش میں ساری

عمر جیل میں رہے لہذا ایسے میں ان کو سیکورٹی فراہم کرنے کا سوال ہی پیدا نہیں ہوتا ۔شبیر احمد شاہ کی

سیکورٹی واپس لینے کا اعلان بھارتی پروپگنڈہ ہے۔ میڈیا سے بات چیت میں انہوں نے بتایا کہ ان کے خاوند

شبیر احمد شاہ کو کبھی بھی ریاستی حکومت کی طرف سے سیکورٹی نہیں دی گئی۔ ڈاکٹر بلقین کا کہنا تھا کہ

میرا شبیر احمد شاہ کے ساتھ 25 سال قبل نکاح ہوا اور جہاں تک میں جانتی ہوں انہیں کبھی بھی سیکورٹی

فراہم نہیں کی گئی۔انہوں نے بتایا کہ اگر چہ ریاستی حکومت کی طرف سے بار بار انہیں سیکورٹی فراہم کرنے

کی پیش کش کی گئی تھی تاہم شاہ صاحب نے ہر بار حکومت کی پیش کش کو ٹھکرا دیا۔ ڈاکٹر بلقین نے بتایا کہ

میرا ماننا ہے کہ میرے خاوند جو اسوقت تہاڑ جیل میں محبوس ہیں، بھارت کے خلاف جدوجہد کر رہے ہیں لہذا

ایسے میں ان کو سیکورٹی فراہم کرنے کا سوال ہی پیدا نہیں ہوتا۔ انہوں نے بتایا کہ میرے خاوند نے اپنی طویل

عمر زندان خانوں میں گزاری ہے لہذا یہ بات سمجھ سے بالاتر ہے کہ ریاستی حکومت کس سیکورٹی کو واپس

لینے کی بات کررہی ہے۔اس دوران انہوں نے شبیر احمد شاہ کو سیکورٹی کے دائرے میں آنے والے حریت

لیڈران کے ساتھ جوڑنے کی سخت الفاظ میں مذمت کی۔

انہوں نے بتایا کہ اگر چہ ریاستی حکومت کی طرف سے بار بار انہیں سیکورٹی فراہم کرنے کی

پیش کش کی گئی تھی تاہم شاہ صاحب نے ہر بار حکومت کی پیش کش کو ٹھکرادیا۔ڈاکٹر بلقین نے بتایا کہ

میراماننا ہے کہ میرے خاوند جو اسوقت تہار جیل میں محبوس ہیں ، بھارت کے خلاف جدوجہد کررہے ہیں لہذا

ایسے میں ان کو سیکورٹی فراہم کرنے کا سوال ہی پیدا نہیں ہوتا۔انہوں نے بتایا کہ میرے خاوند نے اپنی طویل

عمر زندان خانوں میں گزاری ہے لہذا یہ بات سمجھ سے بالاتر ہے کہ ریاستی حکومت کس سیکورٹی کو واپس

لینے کی بات کررہی ہے۔اس دوران انہوں نے شبیر احمد شاہ کو سیکورٹی کے دائرے میں آنے والے حریت

لیڈران کے ساتھ جوڑنے کی سخت الفاظ میں مذمت کی۔ ڈاکٹر بلقین نے اس موقعے پر محکمہ داخلہ کو اس

معاملے میں وضاحت کرنے پر زور دیا اور کہا کہ شبیر احمد شاہ کے خلاف منفی پروپگنڈہ کرنے کے بجائے

محکمہ داخلہ کو اصل حقائق عوام کے سامنے لانے چاہیے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں