فرانس، پیلی جیکٹ مظاہرین کا پھر احتجاج، درجنوں گرفتار

Spread the love

مظاہرین نے موٹر سائیکل سمیت پولیس گاڑی کو آگ لگا دی، دکانوں اور گاڑیوں کے شیشے توڑ دیئے


مظاہرین کو منتشر کرنے کے لیے پولیس نے آنسو گیس شیلنگ کا استعمال، کئی مظاہرین زخمی ہوئے

پیرس(مانیٹرنگ ڈیسک)فرانس میں مسلسل 13ویں ہفتے بھی پیلی جیکٹ مظاہرین نے احتجاج کیا، مظاہرین نے ہنگامہ آرائی کرتے ہوئے

توڑ پھوڑ کی جس کے نتیجے میں کئی مظاہرین زخمی ہوئے جبکہ 36 افراد کو پولیس نے حراست میں لے لیا۔

غیر ملکی میڈیا کے مطابق پیرس اور دیگر شہروں میں ہزاروں پیلی جیکٹ مظاہرین نے

صدر ایمانویل میکرون کی پالیسیوں کے خلاف سڑکوں پر احتجاج کیا،

مظاہرین نے دکانوں اور گاڑیوں کے شیشے توڑ دیئے، ایک موٹر سائیکل سمیت پولیس

کی گاڑی کو آگ لگا دی۔ مظاہرین کو منتشر کرنے کے لیے پولیس نے آنسو گیس

شیلنگ کا استعمال کیا۔ واضح رہے کہ پیلی جیکٹ مظاہرین صدر میکرون کی

معاشی پالیسیوں کے خلاف 17 نومبر 2018 سے احتجاج کررہے ہیں۔

Please follow and like us:

Leave a Reply