33

سربراہ جے یو آئی کا لانگ مارچ سے متعلق قائد مسلم لیگ (ن) سے رابطہ

Spread the love

لانگ مارچ سے متعلق

اسلام آباد ،کراچی( صرف اردو آن لائن نیوز) سربراہ پاکستان ڈیمو کریٹک

موومنٹ (پی ڈی ایم) اور امیر جمعیت علماء اسلام (ف) مولانا فضل الرحمن نے قائد پاکستان مسلم لیگ (ن)نواز شریف سے رابطہ کیا جس میں سابق وزیراعظم نے لانگ مارچ میں بھرپور ساتھ دینے کی یقین دہانی کرا دی ۔

ذرائع کے مطابق مولانا فضل الرحمن اورنوازشریف کے درمیان رابطے میں دونوں رہنماؤں نے موجودہ سیاسی صورتحال پر تفصیلی تبادلہ خیال کیا جبکہ پی ڈی ایم کے احتجاجی پلان کو آگے بڑھانے پر بھی دونوں رہنماؤں کا اتفاق ہوا۔سابق وزیراعظم نواز شریف نے حکومت کو پارلیمنٹ میں ٹف ٹائم دینے اور اپوزیشن جماعتوں کے اتحاد پر اطمینان کا اظہار کیا۔

ذرائع کے مطابق دونوں رہنماؤں نے پارلیمنٹ کے اندر اور باہر حکومت پر دباؤ بڑھانے پربھی اتفاق کیاجبکہ سربراہ پی ڈی ایم نے لاہور کے جلسے کو لانگ مارچ کی شکل دینے پر بھی تبادلہ خیال کیا،اس موقع پر نواز شریف نے کہا پی ڈی ایم لانگ مارچ کے بارے میں جو بھی فیصلہ کریگی ساتھ دینگے،

جبکہ مولانا فضل الرحمن نے کہا حکومت کو مزید وقت دینا عوام اور ملک سے ظلم ہو گا۔
بعدازاں کراچی میں مہنگائی کیخلاف اپوزیشن کے احتجاجی شرکاء سے خطاب کرتے ہوئے حکومت مخالف اتحاد پاکستان ڈیمو کریٹک موومنٹ (پی ڈی ایم) کے سربراہ مولانا فضل الرحمن نے کہا حکمرانوں کو بحیرہ عرب میں غرق نہ کیا تو ملکی بقا خطرے میں ہوگی،

اسلام آباد تک جائیں گے، نااہلوں کو بھگا کر دم لیں گے۔ حکمران کبھی سعودی عرب تو کبھی چین سے بھیک مانگ رہے ہیں، پاکستان تنہائی کی طرف جا رہا ہے۔ ہم ملک کی بقا کی جنگ لڑ رہے ہیں، ہر جگہ موجودہ حکمرانوں کے ہاتھوں قوم کی بدنامی ہو رہی ہے،انہیں قوم پر حکمرانی کا کوئی حق نہیں، نوجوان، مزدور، چھوٹا دکاندار اور ہر کاروباری آدمی مایوس ہے۔

تاریخ گواہ ہے جہاں اقتصادی بحران آیا وہاں بغاوت نے جنم لیا۔ معیشت مستحکم ہو تو قوم مضبوط ہوتی ہیں، یہ حکومت چوری کے ووٹ سے آئی ،کراچی میں مہنگائی و بیروزگاری کیخلاف ریگل چوک پر احتجاجی مظاہر ے سے خطاب میں فضل الرحمن نے مزید کہا ہم نے پہلے دن ہی کہا تھا یہ حکومت ناجائز اور نا اہل ، پی ڈی ایم قوم کی آواز ، ملک میں آئین و قانون کی بالادستی چاہتی ہے۔

اس حکومت کو پتا ہی نہیں ملک کیسے چلا یا جاتا ہے، پی ڈی ایم کا سفر جاری رہیگا، یہ سفر 17نومبر کوکوئٹہ ، 20پشاور اور پھر لاہور سے اسلام آباد تک جائیگا۔ ہم اداروں کو بھی کہنا چاہتے ہیں ادارے حقائق کو سمجھیں ، اپنے کردار کا دوبارہ مطالعہ کریں، ماضی میں جو غلطیاں ہوئیں ان پر نظر ڈالیں،

گریبان میں جھانکیں، کیے پر شرمندگی کا اظہار کریں، قوم سے معافی مانگیں تب جاکر ہم ایک قوم بن سکیں گے۔ انشاء اللہ پاکستان میں عوام کی حقیقی نمائندہ حکومت آئیگی، عوامی حکومت عوام کے مسائل کو سمجھے گی۔ مہنگائی سے تنگ عوام نے بچے فروخت کرنا شروع کر دیئے،

پارلیمنٹ لاجز کے سامنے لوگوں نے بچے برائے فرو خت رکھے ہوئے ہیں۔ قبل ازیں مہنگائی کیخلاف مارچ کے شرکاء سے خطاب میں مسلم لیگ ن کے سینئر رہنما شاہد خاقان عباسی نے کہا تمام جماعتیں ایک بات پر متفق ہیں کہ آئین کی بالا دستی ہو،پی ڈی ایم اقتدار نہیں چاہتی، پاکستان کی بہتری کیلئے کام کررہی ہے،

ملک کا وزیراعظم کہتا ہے لندن میں مہنگائی ہے، ہم لندن میں نہیں ہیں، ملک میں بجلی کے ریٹ تین گناہ بڑھ چکے ہیں، گیس کمی کی نئی نوید سنائی گئی ہے، سردیوں میں تین وقت گیس ملے گی۔ آج پاکستان جس مشکل میں ہے اس کی وجوہات کااظہارکیاجائے،

تمام ادارے اپنی آئینی حدودمیں رہیں، ملک میں پریشانی کی ایک بڑی وجہ 2018ء کے انتخابات کی چوری ہے۔اس موقع پر پختونخواہ ملی عوامی پارٹی کے سربراہ محمود اچکزئی نے خطاب کرتے ہوئے کہا پی ڈی ایم ایک خاص مقصدکیلئے بنایاگیاہے، دنیامیں کوئی ملک آئین وقوانین کے بغیر نہیں چل سکتا۔

لانگ مارچ سے متعلق

ڈاکٹر وحید قریشی بطور محقق

قارئین : ہماری کاوش پسند آئے تو شیئر ، اپڈیٹ رہنے کیلئے فالو کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں