27

بجلی کی قیمت میں ہوشربا اضافہ، نوٹیفکیشن جاری

Spread the love

بجلی قیمت ہوشربا اضافہ

بجلی قیمت مزید اضافہ

اسلام آباد (صرف اردو آن لائن نیوز) نیشنل الیکٹرک پاور ریگولیٹری اتھارٹی نے سی سی پی اے کی

درخواست پر بجلی مزید 2 روپے 52 پیسے فی یونٹ مہنگی کردی ۔نوٹی فکیشن جاری کردیا گیا۔نیپرا

کی جانب سے جاری نوٹی فکیشن کے مطابق سینٹرل پاور پرچیز ایجنسی کی درخواست پر بجلی کی

قیمت میں ستمبر کی ماہانہ فیول ایڈجسٹمنٹ کی مد میں 2 روپے 52 پیسے اضافی کیا گیا ہے، بجلی کی

قیمت میں اضافہ نومبر کے بلوں میں وصول کیا جائے گااضافے کا اطلاق کے الیکٹرک اور لائف لائن

صارفین پر نہیں ہوگا۔دریں اثناقومی اسمبلی میں اپوزیشن لیڈر شہباز شریف نے بجلی کی قیمت میں

مزید اضافے کو ظالمانہ اقدام قرار دے دیا۔منگل کے روز اپنے ایک بیان یمں مسلم لیگ (ن) کے صدر

شہبازشریف نے بجلی کی قیمت میں 2 روپے 52 پیسے مزید اضافے کو ظالم حکومت کا ایک اور

ظالمانہ اقدام قرار دے دیا ہے۔انہوں نے کہاکہ جھوٹی حکومت کا ریلیف کا وعدہ جھوٹ تھا، بجلی کی

قیمتوں میں مزید اضافہ اس کا ثبوت ہے۔ اس حکومت نے قوم سے جھوٹ بولا تھا کہ ٹیکس فری بجٹ

دیا ہے، یہ ہے اس حکومت کی حقیقت ،کہہ چکا ہوں کہ یہ حکومت چلے گی تو نہ معیشت چلے گی،

نہ عوام کی جان بچے گی۔ انہوں نے کہا کہ صنعتوں کوگیس پر سبسڈی کا خاتمہ نئے معاشی بحران کا

نکتہ آغاز ہے، صنعت نہ چلی تو روزگار کیسے ملے گا؟ گیس پر سبسڈی ختم کرنے سے بجلی مزید

مہنگی، صنعتوں کا پہیہ مزید سست ہوجائے گا، یہ نظام نہیں چل سکتا۔ نئی خرید کردہ مہنگی ایل این

جی یہاں پہنچ کر 5000 روپے فی یونٹ پر فراہم ہونے کی اطلاعات خوفناک ہیں، 400 سے 500

کیوبک فٹ یومیہ گیس کی قلت بڑھنا کرپشن، نااہلی، مجرمانہ بدانتظامی کا منہ بولتا ثبوت ہے۔دوسری

طرف نائب صدر پیپلز پارٹی سینیٹر شیری رحمان نے بجلی کے نرخوں میں اضافے کی مذمت کرتے

ہوئے کہا ہے کہ مہنگائی سرکار فیول ایڈجسٹمنٹ کی مد میں بجلی کی قیمت 2 روپے 52 پیسے فی

یونٹ بڑہا رہی ہے۔ اپنے بیان میں شیری رحمن نے کہاکہ اس اضافے سے صارفین پر 35 ارب روپے

کا اضافی بوجھ منتقل کیا جا رہا ہے، حکومت پہلے ہی بجلی کے نرخوں میں 52 فیصد سے زائد

اضافہ کر چکی ہے۔ انہوں نے کہاکہ یہ عوام سے پیسے لوٹ کر رلیف پیکج کا ڈھونگ رچا رہے ہیں،

عوام پر اپنی نااہلی اور بدانتظامی کا مزید بوجھ مت ڈالو۔

بجلی قیمت ہوشربا اضافہ

ڈاکٹر وحید قریشی بطور محقق

قارئین : ہماری کاوش پسند آئے تو شیئر ، اپڈیٹ رہنے کیلئے فالو کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں