سعد رضوی کارکنان اپیل 38

کالعدم تنظیم کا احتجاج ختم, 11 روز بعد معمولات زندگی بحال

Spread the love

کالعدم تنظیم کا احتجاج

وزیرآباد،اسلام آباد(صرف اردو آن لائن نیوز) حکومت اور کالعدم تنظیم کے درمیان نئے معاہدے کے بعد جڑواں شہروں اسلام آبا داور راولپنڈی میں 11 روز بعد معمولات زندگی بحال ہوگئے۔فیض آباد انٹرچینج کو 10 روز بعد ہر قسم کی ٹریفک کیلئے کھول دیا گیا ہے۔مری روڈ پر قائم تمام تعلیمی ادارے، بینک اور کاروباری مراکز معمول کے مطابق کھل گئے، مظاہرین کو روکنے کے لیے مری روڈ پر لگائی گی تمام رکاوٹیں ہٹا دی گئی ہیں، مری روڈ کو مریڑ چوک سے فیض آباد انٹرچینج تک کھول دیا گیا،

مری روڈ کی تمام رابطہ سڑکوں پر بھی ٹریفک رواں دواں رہا، میٹرو بس سروس اور پبلک ٹرانسپورٹ بھی بحال رہی۔میٹرو بس انتظامیہ کا کہنا ہے کہ رحمان آباد اسٹیشن پولیس کی موجودگی کے باعث بند رہی، باقی تمام اسٹیشنز مسافروں کیلئے کھلے رہے۔دوسری جانب جی ٹی روڈ جہلم سے وزیرآباد تک بند رہی، نیشنل ہائی ویز پولیس کے مطابق جی ٹی روڈ پر (آج) منگل تک ٹریفک بحال ہوجائے گی۔میڈیا رپورٹ کے مطابق راولپنڈی سے لاہور اور لاہور سے راولپنڈی چلنے والی ٹرینیں تا حال بحال نہ ہو سکی ۔

ڈویژنل سپریٹنڈنٹ ریلوے راولپنڈی انعام اﷲ کے مطابق ریلوے ہیڈ کوارٹر کی جانب سے لیٹر جاری ہونے کے بعد ٹرین آپریشن بحال ہو سکے گا۔انعام اﷲ نے کہاکہ راولپنڈی سے لاہور یا لاہور اور فیصل آباد کے راستے کراچی جانیوالی ٹرین روانہ نہیں ہو سکی۔ادھر کالعدم تحریک لبیک پاکستان کے سربراہ سعد رضوی سمیت سیکڑوں کارکنوں کے خلاف مقدمہ درج کر لیا گیا،

تفصیلات کے مطابق لانگ مارچ کے دوران پرتشدد واقعات پر پولیس نے کالعدم ٹی ایل پی کے کارکنوں کیخلاف مقدمات درج کر لیے ،مقدمات تھانہ صدر اور تھانہ سٹی وزیر آباد میں درج کیے گئے جس میں سعد رضوی اور ان کے بھائی سمیت 207افراد نامزد ہیں، مقدمات میں 600نامعلوم افراد بھی شامل کیے گئے ہیں،

ایف آئی آر کے مطابق روڈ بلاک، لاؤڈ اسپیکر ایکٹ سمیت تمام کام سعد رضوی کے ایما پر ہوئے، مقدمات لاؤڈاسپیکر ایکٹ ،کارسرکارمیں مداخلت،روڈبلاک کی دفعات کے تحت درج کی گئی ہیں۔دوسری جانب وزیرمملکت علی محمد خان نے مبارکباد دیتے ہوئے کہا ہے کہ جی ٹی روڈ کلیئرکر دی گئی ہے،

،کالعدم ٹی ایل پی کا دھرنا جی ٹی روڈ سے کھلے گراونڈ میں منتقل ہوگیا ہے، دریائے جہلم پر چھوٹی گاڑیوں کے گزرنے کیلئے راستہ بنا دیا گیا تاہم سیکیورٹی کی بھاری نفری تاحال تعینات ہے۔ سرائے عالمگیرمیں کھودی گئی خندق بھر دی گئی ہے۔

کالعدم تنظیم کا احتجاج

ڈاکٹر وحید قریشی بطور محقق

قارئین : ہماری کاوش پسند آئے تو شیئر ، اپڈیٹ رہنے کیلئے فالو کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں