ڈولفن انتہائی ذہین مچھلی 40

ڈولفن انتہائی ذہین مچھلی

Spread the love

ڈولفن انتہائی ذہین مچھلی

سائنسدانوں کا کہنا ہے کہ انسانوں کے بعد ڈولفن وہ جاندار ہے جس کی یادداشت سب سے طویل ہوتی

ہے۔
اس کے علاوہ ایک اور ایسی مچھلی بھی ہے جس کی یادداشت اتنی زبردست ہے کہ زندگی کی آخری سانس تک اس کو اپنے ساتھ گزرے ہوئے تمام واقعات مکمل طور پر ذہن نشین رہتے ہیں۔


عمر بڑھنے کے ساتھ ساتھ انسان کی یادداشت بھی کمزور ہوجاتی ہے لیکن ’’کٹل فش‘‘ کہلانے والی ایک مچھلی اپنی زندگی کے تمام واقعات کو مرتے دم تک مکمل طور پر یاد رکھتی ہے۔


یہ دریافت خود سائنسدانوں کےلیے حیرت انگیز ہے کیونکہ کٹل فش کا شمار چھوٹی مچھلیوں میں ہوتا ہے جن کی عمر ایک سے دو سال تک جبکہ عمومی جسامت صرف 6 سے 10 انچ ہوتی ہے، کٹل فش کی سب سے بڑی انواع بھی محض20 انچ لمبی ہوتی ہیں۔


کٹل فش کی اچھی یادداشت کے بارے میں ماہرین برسوں سے جانتے ہیں لیکن 24 کٹل مچھلیوں پر کی گئی اس تحقیق میں انکشاف ہوا ہے کہ اس چھوٹی سی مچھلی کی یادداشت حیرت انگیز طور پر بے حد مضبوط اور پائیدار ہے۔

ان تمام مچھلیوں کو غذا تلاش کرنے اور غذا کی دستیابی سے متعلق معلومات یاد رکھنے کے بارے میں مختلف تجربات سے گزار کر ان کی ’’واقعاتی نما یادداشت‘‘ جانچی گئی


ان میں سے ایک “گراس شریمپ” (چھوٹی جسامت والا، جھینگے جیسا سمندری جانور) تھا جو کٹل مچھلیوں کی پسندیدہ غذا ہے جبکہ دوسرا “کنگ پران” تھا، جو بڑی جسامت والا جھینگا ہوتا ہے اور جسے کٹل مچھلیاں بہت کم کھاتی ہیں۔

نتائج سے معلوم ہوا کہ ہر عمر کی کٹل مچھلیوں نے نہ صرف غذا تک پہنچنے کا راستہ اور طریقہ بہت جلد یاد کرلیے تھے بلکہ خاصا وقت گزرنے کے بعد جب انہیں دوبارہ ان ہی تجربات سے گزارا تو انہیں اپنا سابقہ تجربہ بہت اچھی طرح یاد تھا۔


یہ بات زیادہ حیرت انگیز تھی “بوڑھی” کٹل مچھلیوں کی یادداشت، نوجوان کٹل مچھلیوں سے بھی کچھ بہتر دیکھی گئی۔

ڈولفن انتہائی ذہین مچھلی

ڈاکٹر وحید قریشی بطور محقق

قارئین : ہماری کاوش پسند آئے تو شیئر ، اپڈیٹ رہنے کیلئے فالو کریں



اپنا تبصرہ بھیجیں