ملک بھر میں کورونا وائرس سے مزید 81 افراد جاں بحق 46

کورونا، 63اموات،2512نئے کیس رجسٹر

Spread the love

کورونا 63اموات

اسلام آباد (صرف اردو آن لائن نیوز) کرونا وائرس سے 24 گھنٹوں میں مزید 63مریض جاں بحق، 2512نئے کیسز رپورٹ ہوئے، نیشنل کمانڈ اینڈ آپریشن سینٹر کے جاری کردہ اعدادو شمار کے مطابق ملک بھر میں کرونا وائرس کے مثبت کیسز کی شرح مزید کم ہوگئی، مجموعی اموات کی تعداد 27ہزار سے تجاوز کر گئی۔

این سی اوسی کے اعلامیہ کے مطابق شہری ہفتے بھر میں ویکسین کی دوسری ڈوز لگوانے کی سہولت حاصل کر سکتے ہیں، دوسری دوز لگوانے لئے اہل شہری کسی میسج کا انتظار کیے بغیر ویکسی نیشن سنٹر تک رسائی حاصل کر سکتے ہیں اتوار کا دن صرف دوسری خوراک کے لیے مخصوص کیا گیا ،

تمام وفاقی اکائیوں کو اس کے مطابق ہدایات دی گئی ہیں۔خیبر پختونخوا حکومت نے صوبے بھر میں کورونا کے حوالے سے ڈائریکٹر جنرل ہیلتھ سروسز اور 2ماہرین وبائی امراض کے مشورے پر ہیلتھ ایمرجنسی میں مزید 3ماہ کی توسیع کی دیدی ہے،

وزیر اعلی خیبرپختونخوا سے منظوری کے بعد باضابطہ سرکاری اعلامیہ جاری کردیا گیا۔لاہور میں حکومت کی جانب سے ویکسین نہ لگوانے والے افراد پر پابندیوں پر عملدرآمد سختی سے نہ ہونے سے ویکسین لگوانے والے شہریوں کی تعداد میں کمی دیکھی گئیں

دوسری جانب ماہرین نے فائزر بوسٹر ڈوز لگوانے افراد کوتشویشناک خبر سنائی۔تفصیلات کے مطابق پابندیاں کا جب اعلان کیا تھا تب ایک دن میں لاہوریوں نے 1 لاکھ سترہ ہزار 767 افراد نے ویکسین لگوائی جب کے ویکسین نہ لگوانے والے افراد پر جب سختیاں نہیں کی گئی تو ویکسین لگوانے والوں کی تعداد تقریباً نصف ہوگئی ہے،

دوسری جانب طبی ماہرین نے 16 برس سے زائد عمر کے ہر شخص کو فائزر کورونا ویکسین کی بوسٹر ڈوز دینے کی مخالفت کردی،ماہرین کا اس حوالے سے کہنا ہے کہ نوجوانوں پر اس کے منفی اثرات کے خدشات ہیں،ماہرین کا نئی تحقیق میں کہناتھا کہ فائزر کی بوسٹر ڈوز صرف 65 برس سے زائد عمر یا انتہائی خطرات سے دوچار افراد کو دی جانی چاہیے،5 سے 11 سال کی عمر کے بچوں کیلئے ویکسین کی اجازت ملنے پر فائزر ویکسین اگلے ماہ کے وسط میں دستیاب ہوسکتی ہے۔

کورونا 63اموات

ڈاکٹر وحید قریشی بطور محقق

قارئین : ہماری کاوش پسند آئے تو شیئر ، اپڈیٹ رہنے کیلئے فالو کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں