سکیورٹی خدشات کا جواز 41

کیویز واپس چلے گئے ،دورہ انگلش ٹیم کیلئے پاکستان کی کوششیں جاری

Spread the love

دورہ انگلش ٹیم پاکستان

اسلام آباد (صرف اردو آن لائن نیوز) دورہ پاکستان ختم کرنے کے بعد نیوزی لینڈ کرکٹ ٹیم کا33رکنی سکواڈ گزشتہ شام 6 بجے چارٹرڈ طیارے سے دبئی روانہ ہوا۔وزیر داخلہ کے مطابق ائیرپورٹ پہنچنے پرنیوزی لینڈ کرکٹ ٹیم اسکواڈ کے کرونا ٹیسٹ کیے گئے۔

ذرائع کے مطابق نیوزی لینڈ ٹیم کے کھلاڑیوں سمیت تمام 33 ممبران کے ٹیسٹ منفی آئے ہیں۔نیوزی لینڈ کے میڈیا نے دعویٰ کیا ہے کہ نیوزی لینڈ کی حکومت کو پاکستان میں کرکٹ ٹیم کے خلاف تھریٹ کی اطلاع فائیوآئیز کی جانب سے دی گئی تھی۔

فائیو آئیز نیوزی لینڈ ، آسٹریلیا،کنیڈا ،امریکا اور برطانیہ پر مشتمل انٹیلی جنس اتحاد ہے۔نیوزی لینڈ ہیرالڈ نے غیرملکی میڈیا کے حوالے سے دعویٰ کیا کہ یہ اطلاع قابل بھروسہ تھی ،جس کے بعد نیوزی لیں ڈ کرکٹ بورڈ کے چیئرمین نے پی سی بی کے چیئرمین کو ٹیلیفون کیا جبکہ دونوں ممالک کے وزرائے اعظم کے درمیان بھی ٹیلیفون پر رابطے ہوئے اور ان رابطوں کے بارہ گھنٹے بعد نیوزی لینڈ ٹیم کا دورہ پاکستان ختم کرنے کا اعلان کر دیا گیا۔

میڈیا کے مطابق نیوزی لینڈکے نائب وزیراعظم گرانٹ روبرٹسن نے خطرات کی نوعیت نہیں بتائی تاہم انہوں نے تصدیق کی کہ اطلاع قابل بھروسہ تھی اور فوری اقدام ضروری تھا۔

دوسری جانب انگلینڈ کے دورہ پاکستان کیلئے وفاقی حکومت نے سفارتی تعلقات استعمال کرنے کا فیصلہ کر لیا۔ذرائع کے مطابق وفاقی حکومت کی جانب سے انگلینڈ کے ہم منصب سے رابطہ کیے جانے کا امکان ہے،

انگلش ٹیم کا دورہ پاکستان کرکٹ کے روشن مستقبل کے لیے اہمیت کا حامل ہے۔ پی سی بی سیریز کے انعقاد کے لیے ہر حربہ استعمال کرے گا۔ادھر انگلش کرکٹ بورڈ کے ترجمان کا کہنا ہے کہ زمینی حقائق جاننے کیلئے ان کے سکیورٹی ماہرین کی ٹیم پاکستان میں ہے جس سے رابطے میں ہیں، ماہرین کی ٹیم سکیورٹی صورتحال کا جائزہ لے رہی ہے،

ٹیم آج یا کل اپنی رپورٹ دے گی۔ترجمان انگلش کرکٹ بورڈ کا کہنا تھا کہ پاکستان کا دورہ کرنا ہے یا نہیں اس حوالے سے اگلے 24 سے 48 گھنٹوں میں فیصلہ کریں گے۔کرکٹ آسٹریلیا نے دورہ پاکستان سے متعلق اہم بیان جاری کر دیا۔کرک انفو کی رپورٹ کے مطابق ترجمان کرکٹ آسٹریلیا کا کہنا ہے کہ نیوزی لینڈ کے پاکستان کے دورہ منسوخی سے آگاہ ہیں تاہم ہم جلد بازی میں دورہ پاکستان سے متعلق فیصلہ نہیں کریں گے۔

ترجمان نے کہا ہے کہ ہم نیوزی لینڈ سے بھی اطلاعات کا تبادلہ کریں گے جب کہ سیکیورٹی ماہرین کا مشورہ بھی اہم ہو گا دیگر سیکیورٹی ایجنسیز سے بھی اطلاعات حاصل کریں گے۔علاوہ ازیں پاکستان کرکٹ بورڈ کے چیئر مین رمیز راجہ کا کہنا ہے کہ نیوزی لینڈ کی جانب سے سیریز منسوخ کیے جانے کے بعد تکلیف میں محسوس کررہا ہوں۔

کرکٹ شائقین کیلئے ویڈیو پیغام میں پی سی بی چیئر مین کا کہنا تھا کہ نیوزی لینڈ کی جانب سے سیریز منسوخ کیے جانے کے بعد جو تکلیف آپ کو ہوئی وہی تکلیف میں محسوس کررہا ہوں، سوچا کچھ تھا لیکن جو ہوا اس پر دکھ ہے، ماضی میں بھی ایسی صورتحال سے گزرے اور ہمیشہ آگے بڑھے۔

انہوں نے کہا کہ ہم اپنی قوت سے پوری دنیا کو چیلنج کرتے ہیں، رمیز راجہ کا کہنا تھا کہ ٹیم کو کہوں گا کہ جو غصہ ہے اس کو پرفارمنس پر نکالیں، جب ہم دنیا کی بہترین ٹیم بنیں گے تو کھیلنے والوں کی لائن لگ جائے گی، سمجھتا ہوں پاکستان ہوم کرکٹ پر دباؤ آیا ہے، امید کرتا ہوں ہم ایک ہوکر ملکی کرکٹ کو اوپر لے کر جائیں گے۔

دورہ انگلش ٹیم پاکستان

ڈاکٹر وحید قریشی بطور محقق

قارئین : ہماری کاوش پسند آئے تو شیئر ، اپڈیٹ رہنے کیلئے فالو کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں