گرفتار نذیر چوہان ضمانت 57

نذیر چوہان نے ترین گروپ سے علیحدگی کا اعلان کردیا

Spread the love

ترین گروپ سے علیحدگی

اسلام آباد (صرف اردو آن لائن نیوز) پاکستان تحریک انصاف کے رہنماء نذیر چوہان نے ترین گروپ سے علیحدگی کا اعلان کرتے ہوئے کہا ہے کہ جہانگیر ترین نے مجھے استعمال کیا، انہیں اپنا لیڈر مانا لیکن وہ اس قابل نہیں، ان جیسا بندہ کسی کا ساتھ نہیں دے سکتا،

شہزاد اکبر اور ان کے اہلخانہ سے شرمندہ ہوں،پی ٹی آئی میں کوئی دھڑا نہیں جو عمران خان کیساتھ کھڑا ہے وہی پی ٹی آئی کا حصہ ہے ۔جیل سے رہائی کے بعد صوبائی وزیر فیاض الحسن چوہان کے ہمراہ میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے نذیر چوہان نے کہا کہ میں جہانگیرترین گروپ سے علیحدگی کا اعلان کرتا ہوں ،

اب میرا ترین گروپ سے کوئی تعلق نہیں ہے۔انہوں نے کہا کہ جہانگیر ترین نے اپنے کیس کیلئے مجھے استعمال کیا۔ انہوں نے کہا کہ جب میں بیمار ہوا تو سب سے پہلے مرزا شہزاد اکبر نے کال کی اور میرا حال پوچھا، میں نے شہزاد اکبر سے واضح طور پر معافی مانگی، میں شہزاد اکبر اور ان کے اہل خانہ سے شرمندہ ہوں۔ انہوں نے کہا کہ چوہدری پرویز الٰہی کا بھی مشکور ہوں کہ انہوں نے میرے لئے ایک مضبوط مؤقف اپنایا۔

انہوں نے کہا کہ میں شہزاد اکبر کی دل آزاری کی وجہ سے معذرت خواہ ہوں، شہزاد اکبر کے پاس جا کر ان کا شکریہ ادا کروں گا۔انہوں نے کہا کہ جہانگیر ترین کو شرم آنی چاہیے ،میری بیماری کے دوران انہوں نے فون کرکے بھی نہیں پوچھا اور نہ ہی میرے بچوں سے کوئی رابطہ کیا ہے۔

انہوں نے کہا کہ میں جہانگیر ترین کی ہر پیشی پر گیا، میں نے جہانگیر ترین کو اپنا لیڈر مانا لیکن وہ اس قابل نہیں۔انہوں نے کہا کہ جہانگیر ترین جیسا بندہ کسی کا ساتھ نہیں دے سکتا۔انہوں نے کہا کہ اس سارے معاملے میں بہت سے منافق لوگوں کے چہرے سامنے آ گئے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ شہزاد اکبر پر الزام سوچ سمجھ کر نہیں لگایا تھا وہ فی البدیع میرے منہ سے نکل گیا تھا، انسان کو جب اپنی غلطی کا احساس ہو تو سافٹ وئیر اپ ڈیٹ ہو جاتا ہے۔انہوں نے کہا کہ جہانگیر ترین ہمارے لئے قابل احترام ہیں لیکن پاکستان تحریک انصاف میں کوئی دھڑا نہیں ہے جو عمران خان کیساتھ کھڑا ہے وہ پی ٹی آئی کا حصہ ہے اور جو عمران خان کیساتھ نہیں وہ پی ٹی آئی کا حصہ نہیں ہے۔

نذیر چوہان نے کہا کہ میری وجہ سے اگر عمران خان کی دل آزاری ہوئی ہے تو میں ان سے بھی معذرت خواہ ہوں۔اس موقع پر فیاض الحسن چوہان نے کہا کہ نذیر چوہان کی ضمانت اللہ کے فضل و کرم سے ہوگئی ہے، پچھلے کئی ماہ سے ایک تنازع چل رہا تھا اور اعلیٰ قیادت کو اعتماد میں لے کر میں نے اپنا کردار ادا کیا۔

صوبائی وزیر نے کہا کہ شہزاد اکبر نے انتہائی مثبت انداز میں ثالثی کے کردار ادا کرنے میں مدد کی، نذیر چوہان کا بھی بہت بڑا کردار رہا اور انہوں نے میری تجاویز پر بھی عمل کیا۔انہوں نے کہا کہ ہمارا کوئی اختیار نہیں کہ ہم کسی کے عقیدے پر اعتراض کریں اور تحقیقات کریں، شہزاد اکبر نے وضاحت کر دی ہے کہ وہ ختم نبوت پر مکمل یقین رکھتے ہیں۔

ترین گروپ سے علیحدگی

ڈاکٹر وحید قریشی بطور محقق

قارئین : ہماری کاوش پسند آئے تو شیئر ، اپڈیٹ رہنے کیلئے فالو کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں