252

ہری پور،شادی میں زہریلا کھانا کھانے سے500 مہمان ہسپتال پہنچ گئے، ہال سیل ،مالک گرفتار

Spread the love

ہری پور (وائس آف ایشا)شادی کی تقریب میں زہریلا کھانا کھانے سے پانچ سو باراتی ہسپتال پہنچ گے، ہسپتالوں میں ایمر جنسی نافذ، بچے اور خواتین بھی شامل ہیں ضلعی انتظامیہ کی بروقت کارروائی شادی ہال مالک کو گرفتار کرکے شادی ہال کو سیل کر دیا مزید تحقیقات جاری۔

ذرائع کے مطابق گذشتہ رات جی ٹی روڈ سرائے صالح پر واقع اسماعیل میرج ہال میں مبینہ طور پر زہریلا کھانا کھانے سے پانچ سوسے زائد لوگ حالت غیر ہونے پر ہسپتال پہنچ گئے۔

بتایا گیا ہے کہ گاؤں کے رہائشی عادل خان ولد احمد نواز خان کی دعوت ولیمہ پر 1300 لوگوں کو مدعو کیا گیا تھا۔

دعوت ولیمہ پر آنے والے تمام افراد کو کھانا کھانے کے بعد اچانک مہمانوں کو قے پیچس معدہ اور پیٹ درد شروع ہو گیا۔

جس کے بعد ان کی حالت انتہائی تشویش ناک ہو گئی ہری پور کے تمام چھوٹے بڑے ہسپتالوں میں مریضوں کی بڑی تعدادکو پہنچایا گیا۔

ہسپتالوں میں ایمر جنسی نافذ کر دی گئی اس موقع پر لوگوں کا کہنا ہے کہ انھوں نے اسماعیل میرج ہال سے کھانا کھایاجس کے بعد ان سب کی حالت غیر ہو گئی۔

ڈھینڈہ سرکاری ہسپتال کے ڈاکٹر نے رابطہ کرنے پر بتایا ہے کہ کل سے اب تک تین سو افراد ایک ہسپتال میں لائے گے ہیں۔

ان میں بچے خواتین بھی شامل ہیں تشویش ناک مریضوں کو ایبٹ آباد ریفر کر دیا گیاہے۔

ڈیوٹی پر موجود ڈاکٹر نے بتایا کہ آنے والے تمام مریضوں کو زہریلا کھانا کھانے کی وجہ سے یہ تمام صورتحال پیدا ہوئی ہے۔

مختلف ہسپتالوں میں آنے والے مریضوں کی تعداد سات سو سے زائد ہے،

نجی ہسپتال کے ڈاکٹر اکرم نے بتایا ہے کہ نجی ہسپتال میں دو سے زائد مریض لائے گے ہیں۔

ادھر ضلعی انتظامیہ نے بروقت کاروائی کرتے ہوئے ڈپٹی کمشنر ہر ی پو رنے اے سی اور فوڈ کنٹرولر پر مشتمل کمیٹی بنا کر ذمہ داروں کا تعین کرکے سخت کاروائی کی ہدایات جاری کر دی ہیں

شادی ہال مالک کو گرفتا رکرکے شادی ہال سیل کر دیا ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں