60

سندھ میں 28 ہزار سے زائد کورونا ویکسین ضائع ہوئیں

Spread the love

سندھ کورونا ویکسین ضائع

کراچی (صرف اردو آن لائن نیوز) سندھ بھر میں کورونا کی مختلف اقسام کی ویکسین کے ضائع ہونے کا انکشاف ہوا ہے، صوبہ بھر میں 28 ہزار 268 سے زائد ویکسین کیڈوزز ضائع ہوچکے ہیں جبکہ ڈائریکٹر ہیلتھ کراچی ڈاکٹر اکرم سلطان ویکسین کے ضائع ہونے سے لاعلم نکلے ہیں۔

محکمہ صحت کی ایک رپورٹ کے مطابق سب سے زیادہ ویکسین اسٹرا زینیکا کے 8 ہزار 653 ڈوز ضائع ہوچکے ہیں، دوسرے نمبر پر سائینو ویک کے 8 ہزار632 ڈوز ، سائینو فارم کے 5 ہزار 892 ڈوزز ، پاک ویک کے 3 ہزار 984ڈوز ،کین سائینو ویکسین کے 1 ہزار 95 ڈوزز ضائع ہوچکے ہیں۔

سب سے کم فائزر ویکسین کے 3 اور موڈرنا ویکسین کے اب تک 9 ڈوزز ضائع ضائع ہوئے ہیں۔ذرائع کے مطابق 80 فیصد سے زائد ویکسین کا ضائع کراچی میں ہوا ہے جس کی بنیادی ذمہ داری ڈائریکٹر ہیلتھ کراچی پر عائد ہوتی ہے ،

تمام ضلعی صحت کے افسران (ڈی ایچ اوز) ڈائریکٹر ہیلتھ کے ماتحت ہیں جو ویکسین کی ترسیل کے ذمہ دار ہیں۔ڈائریکٹر ہیلتھ کراچی ڈاکٹراکرم سلطان نے اس معاملے پر لاعلمی کا اظہار کیا ہے۔

ترجمان محکمہ صحت کے مطابق سندھ میں اب تک 52 لاکھ 13ہزار 95 ویکسین کی خوراکیں لگائیں گئی ہیں،

ذرائع کے مطابق ویکسین کے ضائع ہونے کی وجہ درجہ حرارت کا مناسب نہ ہونے ،متاثرہ شخص کا ویکسین لگواتے وقت انکار کرنا یا طبیعت بگڑنا یا مراکز سے ویکسین فروخت کرنا شامل ہوسکتا ہے۔

سندھ کورونا ویکسین ضائع

ڈاکٹر وحید قریشی بطور محقق

قارئین : ہماری کاوش پسند آئے تو شیئر ، اپڈیٹ رہنے کیلئے فالو کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں