petrol 35

حکومت نے مہنگائی سے ماری عوام پر عید سے قبل پیٹرول بم گرادیا ،پیٹرول 5.40روپے مہنگا

Spread the love

مہنگائی سے ماری عوام

اسلام آباد(صرف اردو آن لائن نیوز) وفاقی حکومت نے مہنگائی سے ماری عوام پر عید سے قبل پیٹرول بم گرادیا اور فی لیٹر پیٹرول کی قیمت میں 5روپے 40پیسے کا اضافہ کر دیا،جس کے بعد پیٹرول کی نئی قیمت 118.09روپے ہوگئی، ڈیزل کی قیمت میں 2.54روپے ، کیروسین 1.39روپے اور لائٹ ڈیزل کی قیمت میں 1.27روپے فی لیٹر اضافہ کیا گیا ہے،

رواں ماہ جولائی میں پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں دوسری بار اضافہ کیا گیا ہے ۔جمعرات کو وزیر اعظم عمران خان کے معاون خصوصی شہباز گل کی جانب سے جاری بیان میں پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں اضافے سے آگاہ کیا گیا،

حکومت نے عید سے قبل ہی عوام پر پیٹرول بم گرا دیا، اور پیٹرول کی فی لیٹر قیمت میں 5روپے 40پیسے کا اضافہ کردیا گیا ہے ۔شہباز گل نے بتایا کہ عالمی منڈی میں گذشتہ کئی ماہ سے پٹرولیم مصنوعات کی بڑھتی ہوئی قیمتوں کے پیش نظر اوگرا نے پٹرول کی قیمت میں 11.40 روپے فی لیٹر اضافے کی تجویز دی گئی تھی۔

وزیرِ اعظم نے اوگرا سفارشات کے برعکس عوامی مفاد میں پٹرول کی قیمت میں محض 5.40روپے فی لیٹر اضافے کی منظوری دی ہے۔ ڈیزل کی قیمت میں 2.54 روپے فی لیٹر، مٹی کے تیل کی قیمت میں 1.39روپے فی لٹر اور لائٹ ڈیزل کی قیمت میں 1.27روپے فی لیٹر کی اجازت دی گئی ہے،

اضافے کے بعد ڈیزل کی نئی قیمت 116.53 روپے، مٹی کے تیل کی نئی قیمت 87.14 روپے اور لائٹ اسپیڈ ڈیزل کی نئی قیمت 84.67 ہوگئی۔

معاون خصوصی نے کہا کہ وزیراعظم نے اوگرا کی سفارشات کے برعکس عوام کو حد درجہ ریلیف فراہم کرنے کا فیصلہ کیا۔

اوگرا تجویز کے مطابق پٹرول کی قیمتوں میں اضافہ نہ کرنے اور عوام کو زیادہ سے زیادہ ریلیف فراہم کرنے کی غرض سے کیے جانے والے اس فیصلے کے نتیجے میں پڑنے والا بوجھ حکومت خود برادشت کرے گی۔

واضح رہے کہ رواں ماہ کے آغاز میں بھی حکومت نے پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں اضافہ کیا تھا۔

مہنگائی سے ماری عوام

ڈاکٹر وحید قریشی بطور محقق

قارئین : ہماری کاوش پسند آئے تو شیئر ، اپڈیٹ رہنے کیلئے فالو کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں