لانڈھی کورنگی کی عوام 68

لانڈھی ، کورنگی کی عوام پانی کی بوند بوند کو ترس گئی

Spread the love

لانڈھی کورنگی کی عوام

کراچی (صرف اردو آن لائن نیوز) واٹر بورڈ مافیہ کے اعلی افسران ملوث ہیں جو کے عید الفطراور عیدالاضحی سے پہلے یہ کام کرتے ہیں اور کراچی کی عوام کو ہزاروں کے عوض ٹینکر مافیا سے پانی دلواتے ہیں ۔

قائدآباد ہائڈرینٹ تک واٹر بورڈ کی لائن ڈیمیج ہونے کے بعد پانی ہائیڈرینٹ تک مختلف کنکشنز اور گریویٹی میں چلتا ہوا آتا ہے جس سے ٹینکر مافیہ کروڑوں کی عیدی بناتی ہے اور تمام افسران کو عید سے پہلے لفافے دیئے جاتے ہیں لیکن عوام کو ذلیل و رسوا اور ٹینکر مافیہ کے رحم و کرم پر چھوڑ دیا جاتا ہے۔

کراچی اور بالخصوص کورنگی، لانڈھی ٹان میں عوام پانی کی بوند بوند کو ترس گئی۔ اور پانی کورنگی کی تیرہ یوسیز میں فالحال عوام کو میسر نہیں۔ تین دن پہلے سیوریج کا پانی یوسی 36 ناصر کالونی میں پانی کی لائنوں میں آیا جس سے اہلِ علاقہ شدید پریشانی میں مبتلا ہوگئے

عوام نے اپنے گھروں کے ٹینک کے ساتھ ساتھ مسجد کے ٹینک کی صفائی بھی کی۔ جامع مسجد ابراہیمیہ اور جامع مسجد فیضانِ مدینہ اور دیگر مساجد کے ٹینک میں سیوریج کا پانی بھر گیا تھا۔ مسجد انتظامیہ بھی ٹینک ڈلوانے پر مجبور کچھ مساجد میں اعلان ہوتے رہے کے وضو گھر سے بناکے نمازی حضرات مسجد میں آئیں جو کے ہمارے لیئے شرم کا باعث ہے۔

واٹر بورڈ عوام کے صبر کا امتحان مت لے ورنہ کورنگی یوسی 36 کی عوام اپنے پر احتجاج کا حق محفوظ رکھتی ہے اور اگر ایک دو دن میں پانی نہیں کھولا گیا تو عوام سڑکوں پر نکل اور واٹر بورڈ کے آفس کے باہر اپنا احتجاج کا حق محفوظ رکھتی ہے۔تین دن پہلے ایک ویڈیو چلتی ہے کے دھابیجی سے پانی کی لائن بریک ہوگئی اور کئی گیلن پانی ضائع ہوگیا جو کے سراسر کراچی کی عوام کے ساتھ زیادتی اور ہائیڈرنٹ مافیہ اور اپنی عیدی بنانے کا واحد طریقہ کار واٹر بورڈ نے نمایا کردیا ہے۔

عیدالفطر پر اور اب عیدالاضحی پر پائپ لائن ڈیمیج کا ڈھونگ رچایا جارہا ہے۔واٹر بورڈ افسران ایم ڈی واٹر بورڈ کی پشت پناہی میں اس گھنانے کام میں ملوث ہیں اور دھابیجی پمپنگ اسٹیشن سے زائد پریشر کو کھول کر سپلائی لائن کو ڈیمیج کیا جاتا ہے اسکے برعکس عام دنوں میں پانی کی لائن کے پریشر کو مستقل Constant رکھا جاتا ہے۔

زائد پریشر کھولنا جو کے پانی کی لائن کی احتیاطی تدابیر میں نمایاں ہوتا ہے انجینیئرز کی موجودگی میں سوچی سمجھی سازش کے تحت کھولا جاا ہے۔

جو کے کراچی کی عوام کے ساتھ سراسر زیادتی ہے۔ دھابیجی پمپنگ اسٹیشن کی مانیٹرنگ رینجز سے کروائی جائے۔ایم ڈی واٹر بورڈ اپنے عہدے سے استعفی دیں تاکہ کراچی کی عوام سکھ کا سانس لے اور واٹر بورڈ کو تین ماہ کے لیئے رینجرز کے حوالے کیا جائے اسکے ساتھ ساتھ اینٹی تھیفٹ ڈیپارٹمینٹ جو کے واٹر بورڈ کے اوپر رکھا ہے اسکو فالفور ختم کیا جائے۔

تمام کرپٹ لوگ اور اسپیشل سیکیوریٹی یونٹ کے پورا تھانہ اور پولیس فورس جو کے واٹر بورڈ کی چوریاں پکڑنے کے لیئے سندھ حکومت کے منسٹر کی پشت پناہی میں چل رہی ہے اسے ختم کیا جائے اور چیف جسٹس آف پاکستان سپریم کورٹ سوموٹو لے کر واٹر بورڈ کو حکم جاری کرے کے ہر گھر سے ماہوار بلنگ کیجائے تاکہ واٹر بورڈ کو خسارے سے بچایا جاسکے۔

ایم ڈی واٹر بورڈ ریٹائرڈ ہائی کورٹ جج کو بنایا جائے جو کے ایمانداری کے ساتھ اپنے فرائض انجام دے سکے اور واٹر بورڈ سے کالی بھیڑوں کا صفایہ کرسکے۔واٹر بورڈ کے لیئے ایک مانیٹرنگ سیل رینجرز کا بنا کر واٹر بورڈ کی نگرانی کروائے جائے تاکہ آئندہ ایسا واقعہ رونما ہونے سے پہلے واٹر بورڈ افسران دس بار سوچیں۔واٹر بورڈ کی ہٹ دھرمی اور اینٹی تھیفٹ ڈیپارٹمینٹ دونوں کا مقصد عوام کو رسوا کرنا اور اپنے نوٹ بنانا ہے ،

ایک کو رکھا چوری پکڑنے کے لیئے اور جو کے چوری پکڑنے کے بجائے خود چوریوں میں ملوث ہیں اسکے لیئے بھی منسٹر سندھ شاید کسی اور کو رکھیں بس بوگس لوگ بھرتی کرتے رہینگے اور کراچی عوام کو رسوا کرتے رہینگے۔ سندھ حکومت سوچ لے وہ دن دور نہیں جب تمام پیداگیری عناصر کو احتساب کے کٹہرے میں لایا جائے گا اور سارا حساب لیا جائے گا۔اور کراچی کی عوام کو انصاف دلایا جائے گا۔

لانڈھی کورنگی کی عوام

ڈاکٹر وحید قریشی بطور محقق

قارئین : ہماری کاوش پسند آئے تو شیئر ، اپڈیٹ رہنے کیلئے فالو کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں