جوہر ٹائون دھماکے میں 44

جوہر ٹائون, دھماکے میں 4افراد جاں بحق ، 16افراد زخمی

Spread the love

جوہر ٹائون دھماکے میں

لاہور(صرف اردو آن لائن نیوز) صوبائی دارالحکومت کے علاقہ جوہر ٹائون میں ہونے والے پر اسرار دھماکے میں 4افراد جاںبحق جبکہ 16افراد زخمی ہو گئے ، زخمیوںمیں دو بچے ،ایک خاتون اور پولیس اہلکار بھی شامل ہے ، دھماکے کی شدت اس قدر زیادہ تھی کہ اس سے اطراف کے 10گھروں اور وہاں کھڑی گاڑیوں اور موٹر سائیکلوں کو بھی نقصان پہنچا ،

اطلاع ملتے ہی امدادی ٹیمیں موقع پر پہنچ گئیں جنہوںنے زخمیوں کو ہسپتال منتقل کیا،پولیس نے دھماکے والی جگہ اور اطراف کے علاقے کو سیل کر دیا ، دھماکے کی نوعیت جاننے کیلئے بم ڈسپوزل سکواڈ اور پنجاب فرانزک سائنس ایجنسی کے ماہرین کوبھی طلب کر لیا گیا ، وزیر اعلیٰ پنجاب سردار عثمان بزدار نے دھماکے کا نوٹس لیتے ہوئے پولیس افسران سے رپورٹ طلب کر لی ۔

تفصیلات کے مطابق گزشتہ روز جوہر ٹائون کے علاقہ بی او آر سوسائٹی کے ایک گھر میں اچانک زور دار دھماکہ ہو گیا جس کی آواز دوردور تک سنی گئی جس سے علاقے میں خوف و ہراس پھیل گیا ، پر اسرار دھماکے سے گھر تباہ ہو گیا اور دھماکے والی جگہ پر آگ بھی لگ گئی ،

دھماکے کی شدت سے اطراف کے 10گھر بھی متاثر ہوئے جن کے شیشے ٹوٹ گئے اور چھتوں سے پلستر اکھڑ کر نیچے گرگئے ۔ دھماکے سے گھروں کے اندر اور باہر کھڑی 3 گاڑیاں اور 3 موٹر سائیکلیں مکمل طور پر اور ایک رکشہ جزوی تباہ ہوگیا۔

بتایا گیا ہے کہ دھماکے کی وجہ سے دو بچوں ،ایک خاتون اور پولیس اہلکار سمیت 16افراد زخمی ہوئے۔ اطلاع ملتے ہی ریسکیو 1122کی ٹیمیں موقع پر پہنچ گئیں جنہوںنے معمولی زخمیوںکو موقع پر ہی طبی امداد دی جبکہ شدید زخمیوں کو قریبی ہسپتال منتقل کر دیا گیا ۔

دھماکے کی اطلاع پرقریبی سرکاری ہسپتالوںمیں ایمر جنسی نافذ کر دی گئی اورایمر جنسیز وارڈکو خالی کروا لیا گیا ۔ میڈیا رپورٹس کے مطابق شدید زخمی ہونے والے2افراد دم توڑ گئے ہیں جبکہ 2کی حالت بدستورتشویشناک ہے ۔ پولیس نے دھماکے کی جگہ اور اطراف کے علاقے کو سیل کر دیا ہے جبکہ پورے علاقے کو بھی گھیرے میں لے کر رہائشیوں کے بیانات قلمبند کئے جارہے ہیں ۔

دھماکے کی نوعیت جاننے کے لئے بم ڈسپوزل سکواڈ اورپنجاب فرانزک سائنس ایجنسی کے ماہرین کوبھی طلب کر لیا گیا جبکہ سوئی گیس اور لیسکو کی ٹیمیں بھی موقع پر پہنچ گئیں ۔ ڈپٹی کمشنرلاہور مدثر ریاض ملک ، سی سی پی او غلام محمود ڈوگر اور ڈی آئی جی آپریشنز ساجد کیانی بھی جائے وقوعہ پر پہنچ گئے او رامدادی کارروائیوں کی نگرانی ۔

سی سی پی او نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ ابھی دھماکے کی نوعیت کے حوالے سے حتمی طور پر کچھ نہیں کہا جا سکتا ، یہ بھی اطلاعات ہیں یہ گیس کا دھماکہ ہے لیکن جانچ پڑتا ل کے بعد حقائق سامنے آئیں گے ۔ انہوں نے بتایا کہ ایک پولیس آفیسر سمیت 15افرادزخمی ہیں جن میں سے 4کی حالت تشویشناک بتائی گئی ہے ۔

وزیر اعلیٰ پنجاب سردار عثمان بزدارنے دھماکے کا نوٹس لیتے ہوئے فوری رپورٹ طلب کرلی ہے ۔ وزیر اعلیٰ پنجاب نے انتظامیہ کو ہدایت کی ہے کہ زخمیوں کو علاج معالجے کی بہترین سہولیات فراہم کی جائیں ۔پولیس کی جانب سے صوبائی دارالحکومت میں اہم مقامات کی سکیورٹی کو مزید سخت کر دیا گیا ہے ۔

جوہر ٹائون دھماکے میں

ڈاکٹر وحید قریشی بطور محقق

قارئین : ہماری کاوش پسند آئے تو شیئر ، اپڈیٹ رہنے کیلئے فالو کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں