54

خاتون ہراسگی کیس میں غفلت برتنے پر وزیراعظم کا نوٹس ، اظہار ناراضگی

Spread the love

خاتون ہراسگی کیس میں

اسلام آباد(صرف اردو آن لائن نیوز) خاتون ہراسگی کیس میں سٹیزن پورٹل پر درج شکایت کے حل میں غفلت برتنے پر وزیراعظم نے نوٹس اور اظہار ناراضگی کرتے ہوئے ڈی جی ایف آئی اے کو شفاف انکوائری کی غرض سے ایف آئی اے کے متعلقہ افسران کو فوری طور پر معطل کرنے کی ہدایت کی گئی ۔

وزیر اعظم آفس کے مطابق خاتون نے پاکستان سٹیزن پورٹل پر 5 مرتبہ شکایات درج کی تاہم ایف آئی اے افسران نے کارروائی نہ کی۔متعلقہ افسران کے خلاف انکوائری کرکے سخت ایکشن کی ہدایت کی گئی ۔ وزیر اعظم آفس کے مطابق خاتون نے ہراسگی کے باعث یونیورسٹی سے نوکری چھوڑ کر ایف آئی اے سے رجوع کیا،

ایف آئی اے افسران کے عدم تعاون کی وجہ سے خاتون نے مبینہ خودکشی کی کوشش کی۔وزیراعظم آفس کے مطابق 16 دسمبر 2019 سے 13 جون 2021 تک ایف آئی اے نے شکایت کو مسلسل نظرانداز کیا۔وزیراعظم آفس کے مطابق دو بار شکایت ری اوپن کے باوجود ایف آئی اے نے اپنی ذمہ داری کی ادائیگی میں کوتاہی برتی،

خاتون اپنے شوہر کے ہمراہ ایف آئی اے کے خلاف شکایت لے کر وزیراعظم آفس پہنچ گئی۔خاتون کی درخواست پر وزیراعظم آفس نے سخت ایکشن لیتے ہوئے متعلقہ افسران کے خلاف سخت کارروائی کی یقین دھانی کرائی ،

وزیراعظم ڈلیوری یونٹ نے ڈی جی ایف آئی اے کو مراسلہ جاری کردیا ۔ وزیر اعظم آفس کے مطابق معاملے کی اعلی سطح تحقیقات کروا کر متعلقہ افسران کے خلاف ضابطے کے مطابق کارروائی کی جائے، خاتون کو جلد از جلد ریلیف فراہم کیا جائے۔

وزیر وزیراعظم نے کہاکہ کسی بھی شہری کی شکایت پر غفلت برتنے کی اجازت نہیں جانے دی جائے گی۔وزیراعظم نے سیٹیزن پورٹل پر درج شکایات کو غیر سنجیدہ لینے والے افسران کے خلاف سخت کارروائی کا عندیہ دیدیا ۔ وزی راعظم آفس کے مطابق انکوائری رپورٹ وزیراعظم کو 20 جولائی 2021 کو پیش کی جائے گی

خاتون ہراسگی کیس میں

ڈاکٹر وحید قریشی بطور محقق

قارئین : ہماری کاوش پسند آئے تو شیئر ، اپڈیٹ رہنے کیلئے فالو کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں