کورونا تیسری لہر تشویشناک 21

سرکاری ملازمین کیلئے ویکسی نیشن لازمی قرار، کورونا سے مزید77 افراد جاں بحق

Spread the love

کورونا سے مزید77

اسلام آباد(صرف اردو آن لائن نیوز) نیشنل کمانڈ اینڈ آپریشن سینٹر (این سی او سی) نے ملک میں ہفتے

میں دو دن کا لاک ڈاؤن کم کرکے ایک دن کر نے کااعلان کرتے ہوئے کہا ہے کہ پبلک ٹرانسپورٹ

میں پچاس فیصد کی بجائے ستر فیصد سواریاں بٹھانے کی اجازت ہوگی،غیر رابطے والے سلیکٹڈ

کھیل کی اجازت ہو گی ، کراٹے،باکسنگ، کبڈی،ریسلنگ جیسی کھیلوں پر پابندی برقرار رہے گی،ان

ڈور جمز صرف ویکسی نیٹڈ لوگوں کے لئے کھل سکیں گے،ثقافتی تقریبات پر پابندی برقرار رہے

گی، مزار اور سینماز بدستور بند رہیں گے،پبلک سیکٹر کے تمام ملازمین تیس جون تک کورونا

ویکسینیشن کرانے کے پابند ہوں گے، ویکسینیشن کی حوصلہ افزائی کے لئے بعض شعبوں

کوخصوصی مراعات بھی دی جائیں گی، تمام شہری رضاکارانہ طور پر کورونا ویکسین لگوائیں گے۔

بدھ کو وفاقی وزیر اسد عمر کی زیر صدارت این سی او سی اجلاس ہوا جس میں ایس او پیز پر عمل

درآمد اور ویکسینیشن کے عمل کا تفصیلی جائزہ لیا گیا ۔این سی او سی اجلاس میں ماس ویکسینیشن

کے حوالے سے اہم فیصلے کئے گئے جن کے مطابق ملک بھر میں ماس ویکسینیشن مہم کو تین

حکمت عملی کے تحت کیا جائے گا، تمام شہریوں کی جانب سے ولنٹیریلی ویکسینیشن حکمت عملی

میں شامل ہیں ،پبلک اور پرائیویٹ سیکٹرز میں بطور فریضہ ویکسینیشن کی حکمت عملی بھی شامل

ہیں ۔این سی او سی کی جانب سے تمام سرکاری ملازمین کیلئے 30 جون تک ویکسینیشن لازمی قرار

دے دی گئی ،این سی او سی نے ویکسینیشن کی حوصلہ افزائی کے لیے مختلف مراعات دینے کا بھی

فیصلہ کیا ۔ این سی اوسی نے بتایاکہ 1 جون سے تمام ویکسینیشن سینٹرز 8 بجے سے رات 10 بجے

تک کھلے رہیں گے،ویکسینیشن سینٹرز کو اتوار کی بجائے جمعہ کو کھلا رکھنے کا فیصلہ کیا گیا

،فیصلے کے مطابق11 جون سے 18 سال سے زائد عمر کے تمام شہری واک ان ویکسینیشن کروا

سکیں گے۔این سی او سی نے 11 ویکسینیشن سرٹیفیکیٹس کی تصدیق کیلئے جون کے آخر تک آئی ٹی

طریقہ کار اپنانے کا فیصلہ کیا ۔این سی او سی کی جانب سے این پی آئیز کے حوالے سے بھی اہم

فیصلے کئے گئے ۔این سی او سی کی جانب سے ہفتہ وار 2 روزہ پابندی ایک دن تک محدود کرنے کا

فیصلہ کرلیا گیا ،جمز میں ویکسینیشن کروانے کے بعد ان ڈور سہولت استعمال کرنے کی اجازت دے

دی گئی ،مخصوص نان کنٹیکٹ سپورٹس پر پابندی ختم کرنے کا فیصلہ کرلیا گیا ۔ اجلاس میں مزاروں

پر عائد پابندی برقرار رکھنے اور سینماز پر عائد پابندی کو بھی برقرار رکھنے کا فیصلہ کیا گیا ۔این

سی او سی کی جانب سے 50 فیصد سٹاف کے گھر سے کام کرنے کی پالیسی کو ختم کرنے کا فیصلہ

کیا گیا ۔ این سی او سی کی جانب سے ہفتے میں دو روز بین الالصوبائی ٹرانسپورٹ پر پابندی ختم

کرنے کا فیصلہ کیا گیا ۔ این سی او سی نے بتایاکہ پبلک ٹرانسپورٹ پر 50 فیصد گنجائش کو 70 فیصد

تک بڑھا دیا گیا، ماسک پہننے کے حوالے سے این سی او سی نے دیگر پابندیوں کو برقرار رکھنے کا

فیصلہ کیا گیا ۔دوسری طرف ملک بھر میں کورونا وائرس سے 77 افراد جاں بحق ہو نے کے بعد

اموات کی تعداد 21 ہزار 453 ہوگئی،پاکستان میں کورونا کے تصدیق شدہ کیسز کی تعداد 9 لاکھ 36

ہزار 131 ہوگئی۔ نیشنل کمانڈ اینڈ آپریشن سینٹر کے تازہ ترین اعدادوشمار کے مطابق گذشتہ 24

گھنٹوں کے دوران ایک ہزار 118 نئے کیسز رپورٹ ہوئے، پنجاب میں 3 لاکھ 43 ہزار 31، سندھ میں

3 لاکھ 25 ہزار 110، خیبر پختونخوا میں ایک لاکھ 34 ہزار 928، بلوچستان میں 25 ہزار 961،

گلگت بلتستان میں 5 ہزار 664، اسلام آباد میں 81 ہزار 871 جبکہ آزاد کشمیر میں 19 ہزار 566

کیسز رپورٹ ہوئے۔ ملک بھر میں اب تک ایک کروڑ 36 لاکھ 63 ہزار 666 افراد کے ٹیسٹ کئے

گئے، گذشتہ 24 گھنٹوں کے دوران 43 ہزار 900 نئے ٹیسٹ کئے گئے، اب تک 8 لاکھ 69 ہزار 691

مریض صحتیاب ہوچکے ہیں جبکہ 3 ہزار 24 مریضوں کی حالت تشویشناک ہے۔ پاکستان میں کورونا

سے ایک دن میں 77 افراد جاں بحق ہوئے جس کے بعد وائرس سے مرنے والوں کی تعداد 21 ہزار

453 ہوگئی۔ پنجاب میں 10 ہزار 397، سندھ میں 5 ہزار 164، خیبر پختونخوا میں 4 ہزار 170، اسلام

آباد میں 766، بلوچستان میں 291، گلگت بلتستان میں 107 اور آزاد کشمیر میں 558 مریض جان سے

ہاتھ دھو بیٹھے۔

کورونا سے مزید77

ڈاکٹر وحید قریشی بطور محقق

قارئین : ہماری کاوش پسند آئے تو شیئر ، اپڈیٹ رہنے کیلئے فالو کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں