117

شدید گرمی کے باعث ملک بھر میں تعلیمی ادارے بند کرنے کا مطالبہ

Spread the love

شدید گرمی کے باعث

لاہور ، اسلام آباد (صرف اردو آن لائن نیوز)کورونا وائرس کے کیسز میں کمی کو مدنظر رکھتے

ہوئے وفاقی حکومت نے 7 جون سے تعلیمی ادارے کھولنے کا فیصلہ برقرار رکھا تھا۔جس کے بعد

سندھ میں صرف نویں کلاس سے لے کر جامعات میں تعلیمی سلسلہ بحال کرنے کی اجازت دی گئی

تھی جبکہ ملک کے دیگر صوبوں میں تمام جماعتوں کے لیے اسکولز بھی کھول دیے گئے ہیں۔تاہم

شدید گرمی کی وجہ سے صوبہ پنجاب میں تعلیمی ادارے کھولنے کے فیصلے کو بچوں کی صحت

کے لیے تشویش کا باعث قرار دیا جارہا ہے جہاں عموماً جون سے لے کر اگست کے وسط تک

مجموعی طور پر ڈھائی ماہ کی گرمیوں کی چھٹیاں دی جاتی تھیں۔علاوہ ازیں آج (9 جون) کو وفاقی

دارالحکومت اسلام آباد میں شدید گرمی کے ساتھ ساتھ بجلی نہ ہونے کے باعث گورنمنٹ فیڈرل اسکول

کے 25 بچے بے ہوش ہوگئے تھے۔پنجاب سمیت کے پی اور بلوچستان کے کچھ شہروں میں بھی

گرمی میں اضافہ دیکھا گیا ہے جبکہ پشاور ہی میں آج پارہ 48 سینٹی گریڈ تک گیا اور پنجاب کے

اکثر شہروں میں درجہ حرارت 42 سینٹی گریڈ سے زیادہ رہا۔ملک میں جاری شدید گرمی کی اس لہر

کے باعث ایک بار پھر تعلیمی ادارے بند کرنے کا مطالبہ کیا جارہا ہے اور اس حوالے سے ٹوئٹر پر

HEATWAVE کا ہیش ٹیگ بھی ٹاپ ٹرینڈ کررہا ہے۔

شدید گرمی کے باعث

ڈاکٹر وحید قریشی بطور محقق

قارئین : ہماری کاوش پسند آئے تو شیئر ، اپڈیٹ رہنے کیلئے فالو کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں