42

تحقیقات میں ثابت ہوجائیگا ہم سوئے ہوئے نہیں تھے،ڈرائیور اعجاز

Spread the love

ہم سوئے ہوئے نہیں

لاہور(صرف اردو آن لائن نیوز) ڈہرکی کے قریب حادثے کا شکار ہونے والی ٹرین کے ڈرائیور نے

کہا ثابت ہوجائیگا کہ وہ سوئے ہوئے نہیں تھے۔ اپنے بیان میں سرسید ایکسپریس ٹرین کے ڈرائیور

اعجاز احمد نے کہا کہ رات 3 بج کر 40 منٹ کے وقت کراچی آنے والی ٹرین کے ڈبے گرے ہوئے

تھے جنہیں دیکھ کر ہنگامی بریک لگانے کی بہت کوشش کی لیکن گاڑی نہیں رکی۔ سرسید ایکسپریس

کی دو ائیرکنڈیشنڈ بزنس کلاس بوگیاں اور ایک ڈائیننگ کار متاثر ہوئی جبکہ حادثے میں ملت

ایکسپریس کی 3 اے سی بزنس اور 8 اکانومی کلاس بوگیاں ڈاؤن ٹریک پر گریں۔ اعجاز احمد کا کہنا

تھا حادثے کی تحقیقات میں یہ ثابت ہوجائیگا کہ میں اور اسسٹنٹ ڈرائیور سوئے نہیں تھے۔ ڈہرکی

ٹرین حادثے میں اب تک جاں بحق ہونے والوں کی تعداد 37 ہوگئی ہے اور متعدد افراد زخمی ہیں۔

جائے حادثہ پر الصبح 3بجکر 40منٹ پر کراچی آنیوالی ٹرین کے ڈبے گرے ہوئے تھے ہنگامی

بریک لگانے کی پوری کوشش کی لیکن گاڑی نہیں رکی،ڈرائیورسرسید ایکسپریس کا بیان

بریک لگانے کی پوری کوشش کی لیکن گاڑی نہیں رکی،ڈرائیورسرسید ایکسپریس کا بیان

ہم سوئے ہوئے نہیں

ڈاکٹر وحید قریشی بطور محقق

قارئین : ہماری کاوش پسند آئے تو شیئر ، اپڈیٹ رہنے کیلئے فالو کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں