غلام فرید صابری قوال 24

غلام فرید صابری قوال کو بچھڑے27 برس بیت گئے

Spread the love

کراچی (صرف اردو آن لائن نیوز) غلام فرید صابری قوال

فن قوالی کو نئی جہت دینے والے غلام فرید صابری کو مداحوں سے بچھڑے 27

برس بیت گئے۔ ان کی گائی ہوئی قوالیاں ا?ج بھی سحر طاری کردیتی ہیں۔’تاجدارِ

حرم’ اور اس جیسی دیگر کئی مقبول قوالیوں سے لوگوں کو جھومنے پر مجبور

کر دینے والے غلام فرید صابری نہ صرف پاکستان کے مقبول ترین قوال تھے بلکہ

دنیا بھر میں قوالی کے کروڑوں چاہنے والوں کے دلوں کی دھڑکن تھے۔غلام فرید

صابری 1930 میں ہندوستانی ریاست مشرقی پنجاب میں پیدا ہوئے، انہیں بچپن

سے ہی قوالیوں کا شوق تھا۔ان کا پہلا البم 1958 میں ریلیز ہوا تھا، البم میں

موجود قوالی ‘میرا کوئی نہیں تیرے سوا’ نے مقبولیت کے تمام ریکارڈز توڑ دیئے۔

5 اپریل 1994 کو کراچی میں غلام فرید صابری کو دل کا دورہ پڑا جو کہ جان

لیوا ثابت ہوا اور وہ خالق حقیقی سے جاملے۔۔دنیا بھر میں قوالی کے کروڑوں

چاہنے والوں کے دلوں کی دھڑکن تھے۔غلام فرید صابری 1930 میں ہندوستانی

ریاست مشرقی پنجاب میں پیدا ہوئے، انہیں بچپن سے ہی قوالیوں کا شوق تھا۔ان کا

پہلا البم 1958 میں ریلیز ہوا تھا،

غلام فرید صابری قوال

ڈاکٹر وحید قریشی بطور محقق

قارئین : ہماری کاوش پسند آئے تو شیئر ، اپڈیٹ رہنے کیلئے فالو کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں