بھارتی ٹیم کینگروز کی سرزمین پر ٹیسٹ سیریز جیتنے والا پہلا ایشیائی ملک بن گیا۔

Spread the love

سڈنی ٹیسٹ میں آسٹریلیا کو شکست دینے کی حسرت انڈین ٹیم کے دل میں ہی رہ گئی۔ بارش نے انڈیا ٹیم کی تمام امیدوں پر پانی پھیر دیا۔ بھارت نے آسٹریلیا کو اس کی سرزمین پرپہلی بار ٹیسٹ سیریز میں 2-1 سے شکست دے دی، آسٹریلیا اور بھارت کے درمیان چوتھا اور آخری کرکٹ ٹیسٹ میچ ہار جیت کے فیصلے کے بغیر ختم ہوگیا۔ شدید بارش کے باعث میچ کا پانچوایں اور آخری روز کھیل مکمن نہ ہوسکا اور میچ ڈرا ہوگیا۔ اس سے قبل بھارت نے 1947-48 میں آسٹریلیا کو اس کی سرزمین پر کسی ٹیسٹ سیریز میں شکست دی تھی۔ یہ سیریز پانچ میچوں کی تھی جس میں بھارت نے آسٹریلیا کو 4-0 سے شکست دی تھی۔ اس طرح کپتان ویرات کوہلی کی قیادت میں نہ صرف بھارت نے آسٹریلوی سر زمین پر پہلی سیریز جیتی بلکہ وہ کینگروز کی سرزمین پر ٹیسٹ سیریز جیتنے والا پہلا ایشیائی ملک بھی بن گیا۔ اس سے قبل بھارت کی چوتھے اور آخری کرکٹ ٹیسٹ میچ پر گرفت برقرار تھی ، آسٹریلوی ٹیم کے سر پر اننگز کی شکست کا خطرہ منڈلا رہے تھے، میزبان ٹیم پہلی اننگز میں 300 رنز بنا کر آئوٹ ہو گئی تھی اور اسے فالو آن کی خفت کا سامنا کرنا پڑا تھا، فالو آن کے بعد آسٹریلیا کی دوسری اننگز کے محض 4 ہی اوورز ہو پائے تھے کہ بارش کے باعث کھیل ممکن نہ ہوسکا۔ آسٹریلوی ٹیم نے چوتھے روز کھیل ختم ہونے تک اپنی دوسری اننگز میں بغیر کسی نقصان 6 رنز بنا لئے تھے اور اسے اننگز کی شکست سے بچنے کیلئے مزید 316 رنز درکار تھے ہیں تاہم میچ کے پانچویں اور آخری روز شدید بارش کے باعث میچ ممکن نہ ہوسکا اور کوئی بال نہ پھینکی جاسکی جس کی وجہ سے میچ ہار جیت کے فیصلے کے بغیر ختم ہوگیا۔ واضح رہے کہ بھارت نے پہلی اننگز میں 7 وکٹوں پر 622 رنز بناکر اننگز ڈکلئیر کی تھی، جس کے جواب میں آسٹریلیا کی پوری ٹیم پہلی اننگز میں 300 رنز بناکر آؤٹ ہوگئی۔ بھارت کے مایہ بلے باز چیتشوار پوجارا کو پوری سیریز میں شاندار کارکردگی کا مظاہرہ کرنے پر میچ اور سیریز کا بہترین کھلاڑی قرار دیا گیا۔

Please follow and like us:

Leave a Reply