57

ایرن کے خلاف اوباما جیسی غلطی کااعادہ نہ کریں، صدربائیڈن کو مشورہ

Spread the love

ایرن کے خلاف اوباما

واشنگٹن (صرف اردو آن لائن نیوز) امریکی کانگریس کے 40 ارکان پر مشتمل

ایک گروپ نے صدر جوبائیڈن کو مشورہ دیا ہے کہ وہ ایران کے معاملے میں

سابق صدر براک اوباما جیسی غلطی کا ارتکاب نہ کریں اور اس کے خلاف عاید

کردہ پابندیوں کو نہیں ہٹائیں۔میڈیارپورٹس کے مطابق امریکی سینیٹر ٹام کاٹن اور

ایوانِ نمایندگان کے رکن مائیک گلاگر نے ایک قرارداد متعارف کرائی ۔اس

پرکانگریس کے 44 ارکان کے دست خط ہیں۔انھوں نے ایک دست خط شدہ بیان

جاری کیا اور اس میں کہا کہ امریکا کو ایرانی نظام کے خلاف اس وقت تک

پابندیاں برقرار رکھنی چاہئیں جب تک وہ جوہری خواہشات سے باز نہیں آجاتا اور

خطے بھر میں تشدد اور دہشت گردی کی سرگرمیوں کی حمایت سے دستبردار

نہیں ہوجاتا۔انھوں نے بیان میں کہا کہ ایران نے اوباما انتظامیہ کی کم زور پالیسیوں

کا فائدہ اٹھایا تھا۔صدر بائیڈن کو ان ہی غلطیوں کا اعادہ نہیں کرنا چاہیے۔جو بائیڈن

حالیہ ہفتوں میں ایک سے زیادہ مرتبہ یہ کہہ چکے ہیں کہ اگر ایران 2015 میں

طے شدہ جوہری سمجھوتے کی سخت پاسداری کرے تو ان کی انتظامیہ بھی ایسا

کرنے کو تیار ہوگی لیکن ایران اس سے پہلے امریکا سے تمام پابندیاں ہٹانے کا

مطالبہ کررہا ہے۔تاہم امریکی صدر کے ناقدین ان پر یہ زور دے رہے ہیں کہ وہ

ایران کے خلاف پابندیوں کو برقرار رکھیں تا کہ اس کو جوہری سمجھوتے کی

پاسداری کے لیے مجبورکیا جاسکے۔

ایرن کے خلاف اوباما

ڈاکٹر وحید قریشی بطور محقق

قارئین : ہماری کاوش پسند آئے تو شیئر ، اپڈیٹ رہنے کیلئے فالو کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں