42

یورپی یونین کو ایسٹرا زینیکا ویکسین کی فراہمی میں ایک بار پھر تاخیر کا سامنا

Spread the love

یورپی یونین ایسٹرا زینیکا

برسلز (صرف اردو آن لائن نیوز) یورپی یونین کو ایسٹرا زینیکا ویکسین کی

فراہمی میں تاخیر کا سامنا ہے، کورونا وبا اور ویکسینیشن پروگرام میں مناسب

سپلائی نہ ہونے سے یورپی یونین کو عوامی اور چند دیگر حلقے تنقید کا نشانہ بنا

رہے ہیں۔میڈیارپورٹس کے مطابق ایسٹرا زینیکا نامی ویکسین سویڈش دوا ساز

ادارے نے آکسفورڈ یونیورسٹی کے اشتراک سے تیار کی ہے۔ اس کمپنی کے

نمائندوں نے یورپی یونین کو مطلع کیا ہے کہ پروڈکشن میں کمی کی وجہ سے

رواں برس کی دوسری ششماہی میں ویکسین کی سپلائی میں رکاوٹ پیدا ہو سکتی

ہے۔ اس دوا ساز ادرے نے طے شدہ سپلائی کا نصف فراہم کرنے کی یقین دہانی

کرائی ہے۔نئی پیش رفت کے بعد اب پہلے سے طے شدہ ایک سو اسی ملین

خوراکوں کی جگہ نوے ملین خوراکیں فراہم کی جائیں گی۔ کچھ ہفتے قبل ایسٹرا

زینیکا نے پہلی سہہ ماہی کے دوران یونین کی فرہم کی جانے والی ویکسین میں

بھی حیران کن کمی کر دی تھی۔اس نئی صورت حال نے یورپی یونین کے رواں

برس موسم گرما کے ویکسینیشن پروگرام کو شدید دھچکا پہنچایا ہے۔ یونین موسم

گرما میں رکن ممالک کے ستر فیصد بالغ افراد کو مدافعتی ویکسین لگانے کی

منصوبہ بندی کیے ہوئے تھی۔برطانوی سویڈش دواساز کمپنی کے ترجمان کا کہنا

تھا کہ ادارہ اپنے سپلائی کے شیڈیول پر نظرثانی جاری رکھے ہوئے ہے اور اس

تناظر میں یورپی کمیشن کو ہفتہ وار اطلاع فراہم کی جائے گی۔ ترجمان کے

مطابق انتہائی کوشش کی جا رہی ہے کہ یورپی یونین اور بقیہ دنیا کو ویکسین کی

سپلائی کسی صورت بڑھائی جائے لیکن سرِ دست ایسا ممکن نہیں ہو رہا۔ایسٹرا

زینیکا کے اس بیان میں واضح کیا گیا کہ یونین کے لیے طے شدہ خوراکوں کے

ہدف کے قریب پہنچنے کی ہر ممکن کوشش کی جائے گی۔

یورپی یونین ایسٹرا زینیکا

ڈاکٹر وحید قریشی بطور محقق

قارئین : ہماری کاوش پسند آئے تو شیئر ، اپڈیٹ رہنے کیلئے فالو کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں