27

امریکہ کے ایران کے ساتھ پانچ باشندوں کی گرفتاری کے معاملے پر مذاکرات

Spread the love

امریکہ ایران مذاکرات

واشنگٹن (صرف اردو آن لائن نیوز) امریکہ نے ایران میں یرغمال بنائے جانے

والے اپنے پانچ شہریوں کی وطن واپسی کے لیے ایرانی حکام کے ساتھ مذاکرات

شروع کر دئیے۔امریکی قومی سلامتی کے مشیر جیک سلیوان نے امریکی ٹی وی سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ تہران حکومت نے امریکہ کے پانچ شہریوں کو

یرغمال بنا رکھا ہے۔ صدر جو بائیڈن کی حکومت کی پہلی ترجیح امریکیوں کو محفوظ انداز میں وطن واپس لانا ہے۔انہوں نے کہا کہ ہم نے امریکی شہریوں کو

یرغمال بنانے کے معاملے پر تہران حکومت سے مذاکرات کا آغاز کر دیا ۔مشیر قومی سلامتی نے امریکی شہریوں کو یرغمال بنائے جانے کو ایک عظیم انسانی

بحران قرار دیتے ہوئے کہا کہ امریکیوں کو غیر منصفانہ اور غیرقانونی طور پر اپنے پاس رکھنے کو برداشت نہیں کریں گے۔جیک سلیوان نے واضح کیا کہ ایران

سے مغویوں کے معاملے پر ہونے والے مذاکرات کے دوران 2015 میں امریکہ کے ایران سے ہونے والے جوہری معاہدے میں دوبارہ واپسی پر کوئی بات چیت

نہیں ہوئی۔انہوں نے کہا کہ جوہری معاہدے پر دوبارہ بات چیت کے لیے ایران نے اب تک کوئی ردِ عمل نہیں دیا۔جیک سلیوان نے دعوی کیا کہ ایران سفارتی طور پر

تنہا ہو چکا ہے نہ کہ امریکہ، اور اب بال ایران کے کورٹ میں ہے۔

امریکہ ایران مذاکرات

ڈاکٹر وحید قریشی بطور محقق

قارئین : ہماری کاوش پسند آئے تو شیئر ، اپڈیٹ رہنے کیلئے فالو کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں