استعفے قائدین کے حوالے 27

آئین میں ترمیم کا حق سپریم کورٹ نہیں پارلیمنٹ کو حاصل ہے، پی ڈی ایم

Spread the love

سپریم کورٹ نہیں پارلیمنٹ

اسلام آباد(صرف اردو آن لائن نیوز)اپوزیشن جماعتوں کے اتحاد پاکستان

ڈیموکریٹک موومنٹ (پی ڈی ایم) کے رہنماؤں نے کہا ہے کہ سپریم کورٹ، الیکشن

کمیشن اور حکومت کو آئین میں ترمیم کا حق نہیں بلکہ صرف پارلیمنٹ کو یہ حق

حاصل ہے۔اسلام آباد سے پی ڈی ایم کے متفقہ امیدوار یوسف رضا گیلانی کے

ہمراہ میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے سابق وزیراعظم شاہد خاقان عباسی نے کہا کہ

الیکشن کمیشن نے انتخابات کو پہلے ہی متنازع بنا دیا ہے، پی ڈی ایم اس بات پر

متفق ہے کہ آئین میں ترمیم کا حق صرف پارلیمنٹ کو ہے، نہ سپریم کورٹ، نہ

الیکشن کمیشن اور نہ حکومت کو یہ حق حاصل ہے۔شاہد خاقان عباسی کا کہنا تھا

چور دروازے سے آئین میں ترمیم کی مکمل مخالفت کرتے ہیں، ایسی کوشش بڑی

زیادتی ہوگی جس کی پی ڈی ایم مخالفت کرے گی، ویڈیو اسکینڈل میں پیسے لینے

اور دینے والے پی ٹی آئی کے لوگ ہیں، قومی اور صوبائی اسمبلیوں کے الیکشن

بھی چوری ہوتے ہیں۔یوسف رضا گیلانی نے کہا کہ ہمارے چار رہنما جیلوں میں

ہیں، مطالبہ کرتا ہوں جیلوں میں موجود اراکین کو ووٹ ڈالنے دیا جائے، سینیٹ

میں پہلی بار ایک نشست پر اتنا شور شرابہ ہو رہا ہے ، عدالت سے قانون میں

ترمیم کا کہا جا رہا ہے ، ہم خود ہارس ٹریڈنگ کے شکار ہوئے، شور تو ہمیں کرنا

چاہیے تھا، ترمیم پارلیمان کا ہی اختیار ہے ، حکومت رابطے کرکے اپنے حالات

بہتر بنائے، سینیٹ الیکشن میں عدلیہ کے سہارے لیے جارہے ہیں، شفافیت ہونی

چاہیے لیکن پارلیمنٹ کا اختیار کوئی ادارہ نہیں لے سکتا، الیکشن کمیشن نے

سینیٹ الیکشن کو متنازع بنادیا۔راجہ پرویز اشرف کا کہنا تھا کہ یوسف رضا گیلانی

کے امیدوار بننے کے بعد حکومت کے پسینے چھوٹ گئے، حکومت ووٹرز کو

کنفیوڑ کرنے کی کوشش کر رہی ہے، لیکن معزز اراکین اسمبلی میرٹ پر فیصلہ

کرینگے۔

پی ڈی ایم

سپریم کورٹ نہیں پارلیمنٹ

ڈاکٹر وحید قریشی بطور محقق

قارئین : ہماری کاوش پسند آئے تو شیئر ، اپڈیٹ رہنے کیلئے فالو کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں