تشدد بچہ جاں بحق 42

نارووال میں زمیندار کے تشدد سے 6 سالہ بچہ جاں بحق ہوگیا

Spread the love

تشدد بچہ جاں بحق

نارووال(صرف اردو آن لائن نیوز) ظفروال کے نواح میں دیپوک گاؤں میں کام

سے انکار پر زمیندار نے تشدد کرکے 6 سالہ بچے کی جان لے لی۔ میڈیا رپورٹ

کے مطابق ظفروال کے نواح میں دیپوک گاؤں میں زمیندار چودھری محمد سرور

نے ایک کام کرنے والے کے بیٹے نعمان حسن کو کام کرنے سے انکار پر تشدد کا

نشانہ بنایا جس سے اس کی حالت غیر ہوگئی بچے کو تحصیل ہیڈکوارٹرز ہسپتال

ظفروال پہنچانے کی کوشش کی گئی لیکن وہ راستے میں ہی انتقال کر گیا ۔سوشل

میڈیا پر وائرل اور الیکٹرانک میڈیا میں رپورٹ ہونیوالے ویڈیو کلپ میں دیکھا گیا

کہ چوہدری محمد سرور بچے پر تشدد کر رہا ہے اور لوہے کے راڈ سے اس کی

کمر اور جسم کے دیگر حصوں پر مار رہا ہے جبکہ بچہ مسلسل روتا اور چلاتا رہا

لیکن ملزم نے اپنا جرم جاری رکھا۔مقامی مزدورخوف کے عالم میں زمیندار کو کم

سن پر تشدد کرتے دیکھتے رہے لیکن کسی نے اسے روکنے اور بچے کو بچانے

کی ہمت نہیں کی۔ادھر نعمان کے والد رئیس عالم نے کہا ہے کہ وہ اور ان کی اہلیہ

تعظیم بی بی نے اپنے ہی گھر والوں سے جھگڑے کے بعد چودھری سرور کے

ساتھ رہنا اور کام کرنا شروع کردیا تھا۔ انہوں نے کہا کہ بچے نے کام کرنے سے

انکار کیا تھا جس پر سرور نے اس پر تشدد کیا اور وہ انتقال کرگیا۔مقامی لوگوں

کے مطابق چودھری سرور، ان کی اہلیہ اور بیٹے پہلے بھی بچوں اور کام کرنے

والوں پر تشدد کرتے رہے ہیں۔ دوسری جانب نارووال ڈسٹرکٹ پولیس افسر سید

علی اکبر نے خبریں وائرل ہونے پر واقعے کا نوٹس لے لیا اور ملزم کے خلاف

کارروائی کی ہدایت کی جس پر ظفر وال پولیس نے چوہدری محمد سرور، اہلیہ

گلشن بی بی اور بیٹوں محمد اعظم، محمد منصور اور محمد ندیم کیخلاف قتل کا

مقدمہ درج کرلیا، تاہم اب تک کوئی گرفتاری عمل میں نہیں آئی ۔

تشدد بچہ جاں بحق

ڈاکٹر وحید قریشی بطور محقق

قارئین : ہماری کاوش پسند آئے تو شیئر ، اپڈیٹ رہنے کیلئے فالو کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں