35

ہوسکتا ہے ایران جوہری ہتھیاروں کا مواد حاصل کرنے میں چند ہفتوں کی دوری پر ہو’ امریکہ

Spread the love

جوہری ہتھیاروں کا مواد

واشنگٹن (صرف اردو آن لائن نیوز) امریکی سیکرٹری آف سٹیٹ اینٹونی بلنکن نے

کہا ہے کہ ہو سکتا ہے کہ ایران جوہری ہتھیاروں کی تیاری میں استعمال ہونے والا

مواد حاصل کرنے میں چند ہفتوں کی دوری پر ہو۔ بلنکن نے کہا کہ امریکی صدر

جو بائیڈن ایران کے لیے ایک ایسی مضبوط ٹیم بنا رہے ہیں جو ایران کے ساتھ

جوہری معاہدے کو اقوام متحدہ کی جانب سے حمایت یافتہ جوائنٹ کمپری ہنسیو

پلان آف ایکشن (جے سی پی او اے) معاہدے سے زیادہ ‘دیرپا اور مضبوط’ بنائے۔

جے سی پی او پر 2015 میں سلامتی کونسل کے مستقل ارکان نے دستخط کیے

تھے جن میں امریکہ، برطانیہ، چین، روس اور فرانس شامل تھے جبکہ جرمنی

اور یورپی یونین نے بھی دستخط کیے۔صدر ٹرمپ نے 2018 میں ایران کے ساتھ

جوہری معاہدہ واپس لے لیا تھا اور تہران پر پابندیاں لگا دی تھیں۔اس فیصلے کو

اپوزیشن کی نیشنل کونسل آف ریزسٹنس آف ایران کی جانب سے سراہا گیا۔نیشنل

کونسل آف ریزسٹنس آف ایران کی جانب سے ہی ایسے ثبوت فراہم کیے گئے تھے

کہ ایران جے سی پی او اے کے باوجود اپنی جوہری صلاحیتوں میں اضافہ کر رہا

ہے۔اپنے ایک انٹرویو میں بلنکن نے یہ بھی کہا کہ بائیڈن انتظامیہ شمالی کوریہ پر

نئی پابندیاں عائد کرنے کے ساتھ ساتھ روس کے خلاف بھی دیگر ممکنہ اقدامات پر

غور کرے گی کیونکہ وہ اپنی خارجہ پالیسی پر نظر ثانی کر رہی ہے۔بلنکن نے

ماسکو کے خلاف پابندیوں کی نوعیت کے بارے میں نہیں بتایا تاہم انتظامیہ کی

جانب سے روس کی صورت حال کا جائزہ لیا گیا ہے جس میں روس میں قید

اپوزیشن لیڈر الیکسی نیوالنی، انتخابات میں مداخلت اور افغانستان میں امریکی

فوجیوں کے خلاف انعامات شامل ہیں۔

جوہری ہتھیاروں کا مواد

ڈاکٹر وحید قریشی بطور محقق

قارئین : ہماری کاوش پسند آئے تو شیئر ، اپڈیٹ رہنے کیلئے فالو کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں