29

تائیوان چین کا اٹوٹ انگ ہے، چینی وزارت دفاع

Spread the love

تائیوان چین اٹوٹ انگ

بیجنگ(صرف اردو آن لائن نیوز) چین نے تائیوان کو خبردار کرتے ہوئے کہا ہے کہ آزادی کا مطلب جنگ ہے۔ چین نے تائیوان کے قریب فوجی مشقیں شروع کی

ہیں جن کو ‘آزادی کا مطلب جنگ’ کا نام دیا گیا ہے اور ان مشقوں کے ساتھ ہی تائیوان کو خبردار کرتے ہوئے کہا ہے کہ چینی افواج غیر ملکی اشتعال انگیزی

اور مداخلت کے جواب میں فوجی مشقیں کررہی ہیں۔چینی وزارت دفاع کے ترجمان نے فوجی مشقوں سے متعلق ہفتہ وار بریفنگ میں بتایا کہ تائیوان چین کا

اٹوٹ انگ ہے جب کہ چینی افواج کی سرگرمیاں سیکیورٹی صورتحال کے پیش نظر انتہائی اہم قدم اور ملکی خودمختاری کی حفاظت کے لیے ضروری ہیں، اس

کے علاوہ یہ تائیوان میں بیرونی مداخلت اور اشتعال انگیزی پھیلانے والی تائیوان کی آزادی کی حامی قوتوں کو واضح جواب بھی ہے۔وزارت دفاع کے ترجمان نے

مزید کہا کہ تائیوان کی آزادی کے حامی عناصر کو خبردار کرنا چاہتے ہیں کہ تائیوان کی آزادی کا مطلب جنگ ہے لہذا جو لوگ آگ سے کھیل رہے ہیں وہ خود

جل جائیں گے۔چین کی حکومت کو خدشہ ہے کہ تائیوان کی منتخب جمہوری حکومت باقاعدہ طور پر آزادی کے اعلان کی طرف بڑھ رہی ہے تاہم تائیوان کی

صدر متعدد بار کہہ چکی ہیں کہ تائیوان ایک آزاد ملک ہے جس کا نام ‘رپبلک آف چائنہ’ ہے۔اس کے علاوہ چین کئی مرتبہ یہ واضح کرچکا ہے کہ تائیوان اس کے

لیے انتہائی حساس اور اہم ترین معاملہ ہے جب کہ کچھ روز قبل چینی وزارت خارجہ کی ترجمان نے بیان میں کہا تھا کہ چین اپنے وعدے پر قائم ہے کہ تائیوان

میں مداخلت سے باز نہ آنے پر امریکا کو ”بھاری قیمت” ادا کرنا پڑے گی۔ اس لیے چین کی جانب سے بعض امریکی حکام پر پابندیاں لگائی جائیں گی۔واضح

رہے کہ چین، تائیوان کو اپنا صوبہ قرار دیتا ہے جب کہ تائیوان خود کو آزاد، خود مختار اور جمہوری ملک ہونے کا دعویٰ رکھتا ہے۔ چین اور تائیوان کے درمیان

تعلقات ہمیشہ کشیدہ رہے ہیں جب کہ تائیوان اقوام متحدہ کا رکن ملک نہیں ہے۔

تائیوان چین اٹوٹ انگ

ڈاکٹر وحید قریشی بطور محقق

قارئین : ہماری کاوش پسند آئے تو شیئر ، اپڈیٹ رہنے کیلئے فالو کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں