ایتھوپیا تباہی کے دھانے 38

ایتھوپیا میں نامعلوم افراد کا حملہ، 80 سے زائد افراد ہلاک

Spread the love

ایتھوپیا میں حملہ

ادیس ابابا(صرف اردو آن لائن نیوز) افریقی ملک ایتھوپیا کے مغرب میں نامعلوم

افراد کے حملے میں اسی سے زائد افراد کو ہلاک کر دیا گیا ہے۔ میڈیارپورٹس کے

مطابق حکام نے بتایاکہ سوڈان کی سرحد کے قریبی بینشانگول-گوموز علاقے میں

پیش آنے والے اس واقعے کو قتل عام قرار دیا جا رہا ہے۔ ہلاک ہونے والوں میں

بچے اور خواتین بھی شامل ہیں۔ اس علاقے میں متعدد نسلی اقلیتیں آباد ہیں۔ یہ نسلی

گروہ ایک دوسرے کو نشانہ بنا رہے ہیں۔ اس علاقے میں گزشتہ ستمبر سے عام

شہریوں کو پستولوں، چاقوں اور دیگر ہتھیاروں سے نشانہ بنایا جا رہا ہے۔ دسمبر

میں اسی طرح کے ایک حملے میں دو سو سے زائد افراد کو ہلاک کر دیا گیا تھا۔

خدشہ ہے کہ اس علاقے میں نسلی تشدد مزید پھیل سکتا ہے۔

مالی میں امن فوجیوں پر حملہ، کم از کم تین اہلکار ہلاک

مغربی افریقی بحران زدہ ریاست مالی میں اقوام متحدہ کے امن فوجیوں کے ایک

قافلے پر حملے کے نتیجے میں کم از کم تین اہلکار مارے گئے ۔غیرملکی

خبررساں ادارے کے مطابق ابتدائی اطلاعات میںبتایاگیاکہ ان تینوں فوجیوں کا تعلق

آئیوری کوسٹ سے تھا۔ اقوام متحدہ کے امن فوجیوں پر گھات لگا کر حملہ کیا گیا

جبکہ زخمی فوجیوں کی تعداد پانچ بتائی گئی ہے۔ ابھی تک ٹمبکٹو میں ہونے والے

اس حملے کی کسی بھی گروپ نے ذمہ داری قبول نہیں کی ہے۔ اس علاقے میں

اقوام متحدہ کے مینوسما نامی مشن کو خطرناک قرار دیا جاتا ہے۔ 2013 سے اس

مشن کے دوران دو سو تیس سے زائد امن فوجی مارے جا چکے ہیں۔

ایتھوپیا میں حملہ

ڈاکٹر وحید قریشی بطور محقق

قارئین : ہماری کاوش پسند آئے تو شیئر ، اپڈیٹ رہنے کیلئے فالو کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں