56

انتہا پسند یہودیوں کے قبلہ اول پر دھاوے،حرم قدسی کی بے حرمتی

Spread the love

قبلہ اول پر دھاوے

مقبوضہ بیت المقدس (صرف اردو آن لائن نیوز) قابض صہیونی فوج اور پولیس کی

فول پروف سیکیورٹی میں یہودی شرپسندوں کی مسجد اقصی کی بے حرمتی کا

سلسلہ جاری ہے۔ گذشتہ روز اسرائیلی فوج اور پولیس کی فول پروف سیکیورٹی

میں یہودی آباد کار مسجد اقصی میں داخل ہوئے اور مقدس مقام کی بے حرمتی کی۔

مرکزاطلاعات فلسطین کے مطابق اسرائیلی فوج اور پولیس کی فول پروف

سیکیورٹی میں یہودی آباد کاروں، یہودی طلبا اور صہیونی انٹیلی جنس حکام سمیت

صبح کے وقت کئی درجن یہودیوں نے مسجد اقصی میں گھس کر بے حرمتی کی۔

شام کے اوقات میں مزید یہودی طلبا نے قبلہ اول میں گھس کر مقدس مقام کی بے

حرمتی کا ارتکاب کیا۔ قابض فوج نے گذشتہ روز مسجد اقصی سے فلسطینی خاتون

نمازی اور سماجی کارکن ھنادی الحلوانی کو حراست میں لے لیا۔فول پروف

سیکیورٹی میں درجنوں یہودی آباد کاروں نے مقدس مقام کی بے حرمتی کی۔

اسرائیلی فوج کی فول پروف سیکیورٹی میں یہودی آباد کاروں نے قبلہ اول میں

گھس کر مقدس مقام کی بے حرمتی کی۔ یہودی آباد کار الگ الگ گروپوں کی شکل

میں قبلہ اول میں داخل ہوئے۔یہودی آباد کاروں کے ہمراہ مسجد اقصی پر دھاوے

بولنے والوں میں اسرائیلی اسپیشل فورسز کے اہلکار بھی شامل تھے جو سنہ

1967 سے زیرقبضہ مراکشی دروازے کے راستے مسجد اقصی میں داخل ہوتے

اور مقدس مقام کی بے حرمتی کرتے رہے۔یہودی آباد کاروں کی قبلہ اول میں گھس

کر بے حرمتی کرنے کی اشتعال انگیز کارروائی ایک ایسے وقت میں جاری ہے

جب دوسری طرف اسرائیلی حکومت نے مسجد اقصی کو فلسطینی نمازیوں کے

لیے کرونا کی آڑ میں بند کر رکھا ہے۔

قبلہ اول پر دھاوے

ڈاکٹر وحید قریشی بطور محقق

قارئین : ہماری کاوش پسند آئے تو شیئر ، اپڈیٹ رہنے کیلئے فالو کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں