سنٹر آٖف ایکسیلنس 114

اسلام آباد میں دوسرے سینٹر آف ایکسیلینس کا سنگِ بنیاد رکھ دیا گیا

Spread the love

اسلام آباد(مہتاب پیرزادہ سے) نیشنل ٹر یننگ بیورواسلام آبادمیں دوسرے سینٹر آف ایکسیلینس کے قیام کا سنگِ بنیادنیو ٹیک ہیڈ کوارٹر میں رکھا گیا۔ نیو ٹیک اور اس کے ڈویلپمنٹ پارٹنرزکے درمیان پانچ سینٹر آف ایکسیلینس کے قیام کے معاہدے کے تحت دوسرے سینٹر آف ایکسیلینس کی تقریب نیو ٹیک ہیڈ کوارٹر میں منعقد ہوئی۔

اسرائیلی وزیر اعظم کا خفیہ دورہ سعودی عرب، محمد بن سلمان سے ملاقات

تقریب کے مہمانِ خصوصی جناب شفقت محمود، وفاقی وزیر برائے تعلیم و پیشہ ورانہ تربیت نے اس طرح کے جدید مراکزکی افادیت کواُجاگر کرتے ہوئے کہا کہ ان مراکز کی تکمیل نہ صرف ٹیویٹ سیکٹر کی بحالی میں اہم کردار ادا کرے گی بلکہ پاکستان کے نوجوانوں کے لیے ملازمت کے یکسر مواقع فراہم کرنے میں بھی یہ مراکز قلیدی کردار ادا کریں گے۔

قارئین : ہماری کاوش پسند آئے تو شیئر ، اپڈیٹ رہنے کیلئے فالو کریں

تقریب سے خطاب کرتے ہوئے پاکستان میں یورپی یونین کے سفیر آنڈو لاکیمیزا نے ٹیویٹ سیکٹر میں اساتذہ کے کردار پر روشنی ڈالتے ہوئے کہا کہ یہ تربیتی مراکز اساتذہ کی تکنیکی صلاحیتوں کو بھی بڑھانے میں کار آمد ہوں گے۔ علاوہ ازیں تقریباً 30 فیصد خواتین اساتذہ اور طالبات اِن تربیتی مراکز سے استفادہ کر سکیں گی۔

پاکستان میںتعینات وفاقی جمہوریہ جرمنی کے سفارت خانے کے ناظم اعلٰی ڈاکٹر ڈیشیمن نے پاکستان میںتکنیکی و پیشہ ورانہ تعلیم کے فروغ کے لیے نیو ٹیک اور وفاقی حکومت کی جانب سے اُٹھائے جانے والے اقدامات کو سراہا۔

نیو ٹیک کے چیئر مین سید جاوید حسن نے تقریب کے شرکاء سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ نیو ٹیک ملک بھر کے نجی شعبے کے ساتھ مل کر ملک میں فنی و تکنیکی تربیت کے فروغ کے لیے کوشاں ہے۔

نیو ٹیک کے ایگزیکٹیو ڈائریکٹر ڈاکٹر فہیم محمد نے ڈویلپمنٹ پارٹنرز کے کردار کو سراہتے ہوئے کہا کہ ملک میں قائم کیے جانے والے سینٹر آف ایکسیلینس ٹیوٹ سیکٹرکی کارکردگی کو بہتر بنانے میں قلیدی حیثیت رکھتے ہیں۔علاوہ ازیں یہ مراکزبین الاقوامی تربیتی اداروں کے معیار کے مطابق نہ صرف تکنیکی تربیت میں مدد گار ثابت ہوں گے بلکہ پاکستان کے ٹیویٹ سیکٹر کو یکسربین الاقوامی معیار کے مطابق ڈھالنے میں بھی اہم کردار ادا کریں گے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں