40

جی 20 ممالک سعودیہ میں گرفتارافراد کی رہائی کیلئے دبائو ڈالیں، ہیومن رائٹس واچ

Spread the love

ریاض (صرف اردو آن لائن نیوز) جی 20 ممالک سعودیہ

ہیومن رائٹس واچ نے جی 20 سے مطالبہ کیا ہے کہ وہ سعودی عرب پر دبا ڈالے

کہ وہ غیر قانونی طور پر حراست میں لیے گئے تمام افراد کی رہائی کو یقینی

بنائے۔غیرملکی خبررساں ادارے کے مطابق ہیومن رائٹس واچ کی جانب سے

جاری بیان میں کہا گیا کہ جی 20 ممالک نے رواں سال سربراہی اجلاس کی

صدارت سعودی عرب کو نوازی ہے۔بیان میں مزید کہا گیا کہ یمن میں شہریوں پر

غیر قانونی حملوں، عام شہریوں کو جیلوں میں بند کرنے اور انہیں ہراساں کرنے

سمیت صحافی جمال خاشقجی کو ریاستی ایجنٹوں کے ذریعے قتل کرانے کے

باوجود جی 20 کے سربراہی اجلاس کی میزبانی کے لیے ریاض کو منتخب کیا

گیا۔ایچ آر ڈبلیو نے کہا کہ انصاف دینے کے بجائے سعودی عرب نے اربوں ڈالر

تفریحی، ثقافتی اور کھیلوں کے پروگرامز میں جان بوجھ کر حکمت عملی کے ساتھ

خرچ کیے۔انہوں نے کہا کہ ریاض کا اقدام انسانی حقوق کی پامالیوں کو چھپانے

کے لیے امیج لانڈرنگ ہے۔ایچ آر ڈبلیو کے مشرق وسطی کے ڈائریکٹر مائیکل پیج

نے کہا کہ جی 20 ممالک سعودی حکومت کی مالی تعاون سے چلنے والی تشہیر

کی کوششوں کو تقویت دے رہے ہیں جبکہ اصلاحات کی آڑ میں 2017 سے جبر

میں نمایاں اضافہ ہوا ہے۔انہوں نے کہا کہ جی 20 ممالک سعودی عرب کو انسانی

حقوق کی پامالیوں کو روکنے کے لیے راضی کرنے میں اہم کردار ادا کرسکتے

ہیں۔

جی 20 ممالک سعودیہ

صدارتی امیدوار جو بائیڈن نے ٹی وی مباحثے میں ٹرمپ کو ’مسخرہ‘ کہہ دیا

قارئین : ہماری کاوش پسند آئے تو شیئر ، اپڈیٹ رہنے کیلئے فالو کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں