44

گستاخانہ خاکے، پاکستان میں مظاہرے, فرانسیسی اشیاء کا بائیکاٹ

Spread the love

کراچی،لاہور(صرف اردو آن لائن نیوز) پاکستان میں مظاہرے

فرانس میں حکومتی سرپرستی میں گستاخانہ خاکے آویزاں کرنے کیخلاف ملک بھر میں چھوٹے بڑے احتجاجی مظاہرے ہوئے جس میں ہزاروں عاشقان رسول ؐ

نے شرکت کی۔راولپنڈی میں تنظیم المدارس اہلسنت پاکستان کی جانب سے راجہ

بازار اور سیٹلائٹ ٹاؤن سے فیض آباد تک دو بڑی احتجاجی ریلییاں نکالیں گئیں۔

مظاہرین نے وزیراعظم عمران خان سے فرانسیسی مصنوعات کا مکمل بائیکاٹ

کرنے اور فرانسیسی سفیر کو ناپسندیدہ شخصیت قرار دے کر ملک بدر کرنے

سمیت کا مطالبہ کیا۔شرکا نے ہاتھوں میں کتبے اور بینرز اٹھارکھے تھے جن پر

فرانس کے مکروہ اقدام کے خلاف نعرے درج تھے اور فضا فرانس مردہ باد کے

نعروں سے گونجتی رہی جبکہ فرانسیسی صدر کا پتلا بھی نظر آتش کیا گیا۔پشاور،

کراچی اور لاہور سمیت بیشتر شہروں میں عدالتوں میں وکلا کی جزوی ہڑتال رہی۔

وکلا نے بھی گستاخانہ خاکوں کے خلاف احتجاج ریکارڈ کراتے ہوئے تمام عدالتی

کارروائی کا بائیکاٹ کیا اور عدالتوں میں پیش نہیں ہوئے۔کراچی میں جماعت

اسلامی کی طرف سے تین تلوار پر فرانسیسی حکومت کے خلاف احتجاج کیا گیا۔

کراچی بار کے تحت وکلا نے ایم اے جناح روڈ پر ریلی نکالی اور علامتی دھرنا

بھی دیا۔ جامعہ کراچی میں بھی اساتذہ نے فرانس کے خلاف ریلی نکالی اور

احتجاج کیا۔گوجرانوالہ میں جماعت اسلامی نے گستاخانہ خاکوں کی اشاعت کے

خلاف احتجاج کیا جس میں طلبا نے بھی شرکت کی۔ گوجرانوالہ میں ہی سابق صدر

چیمبر آف کامرس عاصم انیس کی قیادت میں تحفظ ناموس ریلی نکالی گئی جو بس

سٹاپ سے ہوتی ہوئی جی ٹی روڈ شیرانوالہ باغ جاکر اختتام پزیر ہوئی۔لاہور کی

شاہ عالم مارکیٹ میں صدرانجمن تاجران لاہور مجاہد مقصود بٹ کی قیادت میں

تاجروں نے احتجاجی ریلی نکالی۔ فیصل آباد کے شہر سمندری میں مختلف مذہبی

جماعتوں اور سول سوسائٹی کی جانب سے احتجاجی ریلی نکالی گئی۔

پاکستان میں مظاہرے

صدارتی
امیدوار جو بائیڈن نے ٹی وی مباحثے میں ٹرمپ کو ’مسخرہ‘ کہہ دیا

قارئین : ہماری کاوش پسند آئے تو شیئر ،
اپڈیٹ رہنے کیلئے فالو کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں